.

سعودی پروگرام کے تحت یمن میں 1155 بارودی سرنگیں ناکارہ بنا دی گئیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں سعودی عرب کی طرف سے بارودی سرنگوں کی تلفی کے لیے جاری پروگرام کے تحٹ حوثیوں کی بچھائی گئی بارودی سرنگوں کی تلفی کا عمل جاری ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق بارودی سرنگوں کی تلفی کے پروگرام 'مسام کی طرف سے ہفتے کے روز جاری کردہ ایک بیان میں‌ بتایا گیا ہے کہ یمن کے مغربی ساحلی علاقوں میں گذشتہ چند ہفتوں سے جاری آپریشن میں 1155 بارودی سرنگیں تلاش کرکے انہیں ناکارہ بنایا گیا۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ جب سے یمن میں 'مسام' پروگرام کا آغاز ہوا ہے اس نوعیت کے 80 آپریشنز کیے گئے ہیں۔ یمن کے مغربی ساحلی علاقوں میں مسام کی 28 رکنی ٹیم نے بارودی سرنگوں کی تلاش اور انہیں ناکارہ بنانے میں حصہ لیا۔

سعودی عرب کے 'مسام' پروگرام کے ڈائریکٹر جنرل اسامہ القصیبی نے بتایا کہ باب المندب کے علاقے میں 313 ٹینک شکن بارودی سرنگیں، 313 فیوز، 208 ناکارہ گولے،6 میزائل اور 315 لوگوں کو جانی نقصان پہنچانے کے لیے نصب کی گئی بارودی سرنگیں تباہ کیں۔

القصیبی کا کہنا تھا کہ مسام کا بارودی سرنگوں کی تباہی کے آپریشن جاری ہے۔ شہریوں کو ایسے مقامات سے دور رہنے کی ہدایت کی گئی ہے جہاں پر مسام کی ٹیم نہیں سکی اور ممکنہ طور پر حوثیوں کی طرف سے بچھائی گئی بارودی سرنگوں کی موجودگی کا خدشہ ہو سکتا ہے۔

مسام نے یمن میں باوردی سرنگوں کی تلفی کا پروگرام 2018ء میں شروع کیا تھا۔ اس پروگرام کے تحت اب تک ایک لاکھ 83 ہزار بارودی سرنگیں تباہ کی گئی ہیں۔