مصر: حجاب کی حمایت پر خاتون ٹی وی میزبان کو پوچھ تاچھ کا سامنا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

مصر کی سپریم میڈیا ریگولیرٹری کونسل نے ایک نجی ٹی وی چینل کی خاتون پیش کار رضوی الشربینی سے مبینہ طور پر حجاب کی حمایت کرنے پر تحقیقات شروع کی ہیں۔ تحقیقات مکمل ہونے تک اسے کام سے روک دیا گیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مصر سے عربی میں نشریات پیش کرنے والے CBC ٹی وی چینل کے پروگرام 'ھی وبس' کی میزبان رضوی الشربینی نے حال ہی میں با حجاب خواتین کی تعریف کی تھی۔ میڈیا ریگولیرٹی کونسل کی انسداد شکایات کمیٹی کو ملنے والی شکایات میں کہا گیا ہے کہ الشریبی نے ایک ٹی وی شو میں کہا تھا کہ 'میرا وجدان یہ کہتا ہے کہ خواتین کو حجاب کرنا چاہیے کیونکہ حجاب کرنے والی خواتین مجھ جیسی حجاب نہ کرنے والی خواتین کی نسبت ایک لاکھ گنا زیادہ خوبصورت دکھتی ہیں۔

اس کا مزید کہنا تھا 'حجاب سے گریز شیطانی عمل ہے۔ شیطان کا نفس ایمانی طاقت پر بھاری ہوتا ہے مگر مومن کا ایمان شیطان پر بھاری ہوتا ہے۔ اگر آپ اپنے رب کے نزدیک خوبصورت ہیں تو یہی اصل حسن ہے'۔

مصری ٹی وی پیش کارہ کے یہ الفاظ لبرل حلقوں اور نام نہاد روشن خیال طبقے پر بجلی بن کر گرے اور انہوں‌ نے اس کے خلاف شکایات کے انبار لگا دیے۔ ناقدین کا کہنا ہے کہ الشربینی نے حجاب نہ کرنے کرنے والی خواتین کو 'شیطان' کہا ہے جب کہ سول سوسائٹی کے لوگوں کا کہنا ہے کہ الشربینی کا بیان غیرمحجب خواتین کو ہراساں کرنے کی ترغیب دینے کے مترادف ہے۔ اس کے بیان سے خواتین کے خلاف تشدد کے واقعات میں اضافہ ہو سکتا ہے۔

انسانی حقوق کی کارکن نہاد ابو القصمان نے رضوی الشربینی کے بیان کو غیرمحجب خواتین کے خلاف تشدد پراکسانے کے مترادف قرار دیا۔ اس کا کہنا تھا کہ حجاب نہ اوڑھنے والی خواتین کے بارے میں ٹی وی پیشکارہ کے ریکارکس'جرم' ہے۔

القصمان کا کہنا تھا کہ ٹی وی چینل کی میزبان نے حجاب کی حمایت اور بغیر حجاب خواتین کو تنقید کا نشانہ بنا کر سوشل میڈیا اور اپنے ٹی وی پروگرام کی ریٹنگ بڑھانے اور اسلام پسندوں کی حمایت حاصل کرنے کی کوشش کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں