.

اسرائیل اور بحرینی وزرا دفاع کی علاقائی امن پر بات چیت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی وزیر دفاع اور سابق آرمی چیف جنرل ریٹائرڈ بینی گانٹز نے اپنے بحرینی ہم منصب عبداللہ النعیمی سے ٹیلیفون پربات کرتے ہوئے انہیں صہیونی ریاست کے دورے کی دعوت دی ہے۔

بحرین کی سرکاری نیوز ایجنسی کے مطابق دونوں رہ نماوں کے درمیان'معاہدہ ابراہیم' پر ٹیلیفون پر بات چیت کی گئی۔ دونوں رہ نماوں نے خطے میں استحکام، باہمی شراکت، دونوں وزارتوں کے درمیان تعاون اور علاقائی امن کو مزید مستحکم کے لیے مشترکہ اقدامات پر زور دیا۔

اس موقع پر اسرائیلی وزیر دفاع نے بحرینی ہم منصب کو دورہ اسرائیل کی دعوت دی۔ خیال رہےکہ توقع ہے کہ کل سوموار کو بحرین اور اسرائیل امریکا مں ہونے والے معاہدے پر دستخط کریں گے۔ اس موقعے پر امارات اور اسرائیل بھی دو طرفہ معاہدے پر دستخط کریں گے۔

قبل ازیں بحرین کے وزیر خارجہ عبداللطیف الزیانی ایک اعلی اختیاراتی وفد کےہمراہ واشنگٹن پہنچے۔ وہ آج 15 ستمبر کو امارات اور اسرائیل کے درمیان باقاعدہ امن معاہدے پر دستخط کی تقریب میں شرکت کریں گے۔ امارات کے وزیرخارجہ الشیخ عبداللہ بن زاید آل نھیان اور اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاھو بھی واشنگٹن پہنچ چکے ہیں۔

کل سوموار کے روز بحرین کے وزیر صنعت وتجارت و سیاحت زاید بن راد الزیانی اور اسرائیل کے علاقائی تعاون کے وزیر اویر اکونیس کےدرمیان دو طرفہ تعاون پر تبادلہ خیال ہوا۔ دونوں رہ نماوں نے دو طرفہ تجارت، سیاحت اور صنعت کے شعبوں کو فروغ دینے کے لیے ایک دوسرے کے ساتھ تعاون پر تبادلہ خیال کیا۔