یمن کی آئینی حکومت اور حوثی باغیوں میں قیدیوں کے تبادلے کے لیے مذاکرات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یمن کی آئینی حکومت نے کہا ہے کہ اس کا ایک وفد سویڈن معاہدے کے تحت حوثی باغیوں سے قیدیوں کے تبادلے پر بات چیت کے لیے جلد جنیوا روانہ ہو گا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق یمنی حکومت کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ جنیوا میں اقوام متحدہ کی زیرنگرانی ہونے والے مذاکرات میں شرکت کے لیے حکومت کا ایک اعلیٰ سطحی وفد جلد روانہ ہو گا۔

یمن میں وزارت برائے انسانی حقوق کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کیہ جنیوا میں ہونے والے مذاکرات میں حوثیوں کے ہاں قیدی بنائے گئے شہریوں اور سرکاری عہدیداروں کی رہائی کا میکانزم تیار کرے گا۔

یمنی سیکرٹری برائے انسانی حقوق ماجد فضائل نے کہا کہ حکومت حوثی باغیوں کے ساتھ قیدیوں کے تبادلے کے لیے ڈیل پر تیار ہے۔
انہوں نے بتایا کہ قیدیوں کے تبادلے کی بات چیت میں تیسرے مرحلے پر 1420 قیدیوں کی مرحلہ وار ہائی پر بات چیت کی جائے گی۔

اس سلسلے میں‌ حکومت کا ایک وفد آج جمعرات کے روز جنیوا روانہ ہوگا۔ حکومت اور حوثی باغیوں کے درمیان مذاکرات یمن میں اقوام متحدہ کے ہائی کمیشن اور ریڈ کراس کی معاونت سے ہوں‌ گے

قبل ازیں اقوام متحدہ کا ایک خصوصی طیارہ صنعا سے حوثی باغیوں کےایک وفد کو لے کر جنیوا جا چکا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں