مجاھدین خلق کا خامنہ ای کو حاصل تحفظ ختم کرنے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

ایران کی اپوزیشن جماعت مجاھدین خلق کی سربراہ مریم رجوی نے ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای کو حاصل تحفظ ختم کرنے اور ان کے خلاف شہریوں کو ماورائے عدالت قتل کے جرائم کا ذمہ دار قرار دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ‌ کے مطابق ایک بیان میں مریم رجوی نے کہا کہ ایرانی عوام کی غربت اور افلاس کی وجہ موجودہ حکمران ہیں۔ تیل سے حاصل ہونے والی اربوں‌ ڈالر کی آمدن خامنہ ای کی جیب میں جاتی ہے۔

مریم رجوی کا کہنا تھا کہ ایرانی عوام موجودہ حکمران رجیم سے نالاں ہیں۔ عوامی احتجاج نے حکومت کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔ عوامی انتفاضہ حکمران طبقے کا جلد دھڑن تختہ کر دے گا۔ انہوں‌ نے ایران کی اعلیٰ سطح کی قیادت پر کڑی پابندیاں عاید کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔

اپوزیشن رہ نما نے انکشاف کیا کہ ایرانی حکومت بچوں اور عوام شہریوں کو پکڑ کر جیلوں میں ڈال رہی ہے۔ ایمنسٹی انٹرنیشنل ایرانی ریاست کے جرائم اور بے گناہ شہریوں کی اندھا دھند پکڑ دھکڑ کی گواہ ہے۔

ایک دوسرے پیغام میں مریم رجوی نے کہا کہ ایرانی عوام کو علاقائی جنگی، دوسرے ممالک میں مداخلت اور جوہری ہتھیاروں کی کوئی ضرورت نہیں۔

ایران کے نوجوان پہلوان نوید افکاری کی سزائے موت پر تبصرہ کرتے ہوئے مریم رجوی نے کہا کہ افکاری کی موت موجودہ ایرانی رجیم کے جرائم کا ایک تازہ ثبوت ہے۔ افکاری کو موجودہ نظام کے خلاف آواز اٹھانے پر جان سے مار دیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں