.

سعودی عرب : الشہوان کا مشہور قلعہ 'تیماء' کی قدیم تاریخ کا گواہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے صوبے تبوک میں تیماء ڈسٹرکٹ میں واقع آثار قدیمہ کے مقامات کی مٹی کی دیواریں اپنے اندر قدیم زمانے کے انسانوں کی تاریخ محفوظ رکھتی ہیں۔ ان میں پرانے وقتوں کی زندگی سے متعلق تعمیراتی ورثے کی تفصیلات بھی پائی جاتی ہیں۔ بالخصوص "ہداج" کے مشہور کنوئیں کے پاس جہاں یہ پرانا قصبہ واقع ہے۔

سعودی فوٹوگرافر عبدالالہ الفارس نے پیشہ وارانہ انداز میں اس تاریخی مقام کو اپنی تصاویر میں محفوظ کیا ہے۔ ان سے اندازہ ہوتا ہے کہ سیکڑوں سال گزر جانے کے باوجود یہ جگہ اپنی تمام تر قدیم تفصیلات کے ساتھ قائم و دائم ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے گفتگو کرتے ہوئے الفارس نے بتایا کہ "تاریخی ورثے سے متعلق عمارتیں اسلاف کی تہذیبوں کا ورثہ ہیں۔ یہ صرف زبان و ادب تک محدود نہیں بلکہ یہ معاشرتی طور پر اسے تاریخ میں اہم مقام حاصل ہے"۔

الفارس کے مطابق تیماء میں عمرانیات سے متعلق ورثے کو توجہ اور بحالی کی ضرورت ہے۔ یہاں کی عمارتوں کے بارے میں تمام تر تفصیلات محفوظ ہیں۔ ان میں الشہوان کا تاریخی قلعہ نمایاں ترین ہے۔ یہ تیماء میں الشہوان خاندان کی ملکیت ہے۔

الفارس کا کہنا ہے کہ "بہت سے لوگوں کو اس بات کا پتہ نہیں کہ تیماء کے دامن میں منفرد تعمیراتی ورثہ سمویا ہوا ہے۔ ان میں سے ہر عمارت خوب صورت فن تعمیر اور جمالیاتی جدت کا منظر پیش کرتی ہے۔ ان میں بعض عمارتیں 200 سال پرانی ہیں۔ ان میں الشہوان کا تاریخی قلعہ بھی شامل ہے"۔

سعودی فوٹوگرافر کے مطابق "یہ قلعیہ منفرد تعمیراتی ڈیزائن کے سبب امتیازی شان رکھتا ہے۔ یہ کھجور کے باغات اور دیگر فارمز کے بیچ واقع ہے جس کے سبب یہ انتہائی خوب صورت اور شان دار منظر پیش کرتا ہے۔ اس طرح تیماء منفرد تعمیراتی ورثے کا ذخیرہ رکھتا ہے جو اس کی تاریخ کے تہذیبی اور ثقافتی پہلوؤں کا عکاس ہے۔

یاد رہے کہ تیماء کو پرانے دور کے عربوں نے آباد کیا تھا۔ یہ سعودی عرب کے شمالی صوبے تبوک کے جنوب مشرق میں 264 کلو میٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔ یہاں ایسے آثار قدیمہ بھی ہیں جن کی تاریخ ہزاروں سال پرانی ہے۔ آثاریاتی دریافتوں سے انکشاف ہوا ہے کہ جدید حجری زمانے سے یہاں زندگی کا آغاز ہو گیا تھا۔ یہاں ملنے والی بعض آثار قدیمہ کے چیزیں دو ہزار سال قبل مسیح کی ہیں۔ یہ چیزیں مٹی کے منقش برتنوں کی شکل میں ہیں جن پر آثار قدیمہ کے سائنس دانوں نے تحقیق کی ہے۔