.

لبنان میں نئی کابینہ کی تشکیل میں ناکامی کوئی خوشی منانے کا موقع نہیں: سعدالحریری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لبنان کے سابق وزیراعظم سعد الحریری نے کہا ہے کہ جو کوئی فرانسیسی اقدام اور نئی حکومت کی تشکیل میں ناکامی پر خوشی منا رہا ہے تو اس کو بعد میں وقت کے ضیاع پر پچھتانا پڑے گا۔

انھوں نے ہفتے کے روز ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’جو لوگ آج فرانسیسی صدر عمانوایل ماکروں کے اقدام کی ناکامی پر شاداں وفرحاں ہیں،وہ بالآخر خود ہی افسوس کا اظہار کریں گے اور ندامت سے اپنی انگلیاں مُنھ میں داب لیں گے۔‘‘

ان کے اس بیان سے چندے قبل لبنان کے نامزد وزیراعظم مصطفیٰ ادیب نے نئی کابینہ کی تشکیل میں ناکامی کا اعتراف کرتے ہوئے عہدے سے دستبردار ہونے کا اعلان کردیا ہے۔وہ نئی حکومت بنانے کے لیے تمام سیاسی دھڑوں میں اتفاق رائے میں ناکام رہے ہیں۔انھوں نے صدر میشیل عون کو اپنے فیصلے سے آگاہ کردیا ہے۔

مصطفیٰ ادیب نے لبنانی آئین کے مطابق اپنی نامزدگی کے بعد 15 ستمبر تک اپنی کابینہ تشکیل دینا تھی لیکن مختلف مگر متحارب سیاسی جماعتوں کے درمیان وزارتوں کی تقسیم پر اتفاق رائے نہیں ہوسکا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں