.

سعودی عرب: 'جی 20 یوتھ سمٹ' کل جمعرات سے جاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

آئندہ ماہ نومبر میں سعودی عرب کی میزبانی میں ہونے والے 'جی 20' سربراہ اجلاس سے قبل اس کے ذیلی اداروں اور گروپوں‌ کے سعودی عرب میں اجلاس جاری ہیں۔

کل جمعرات کو 'یوتھ 20' سمٹ کا اجلاس الریاض میں شروع ہوا۔ شہزادہ محمد بن سلمان فائونڈیشن 'مسک الخیریہ' اور شاہ عبدالعزیز مرکز برائے عالمی ثقافت 'اسرا' کے تعاون سے شروع ہونے والے اجلاس کے اختتام پر ایک پالیسی بیان جاری کیا جائے گا جس میں ان پالیسیوں اور نکات کا تذکرہ کیا جائے گا جنہیں 'جی 20' اجلاس کے موقع پراپنانے کی سفارش کی جائے گی۔

تین روز تک جاری رہنے والے 'یوتھ 20 سمٹ' میں‌ نوجوانوں کے مسائل، انہیں درپیش اقتصادی چیلنجز اور نوجوانوں کے لیے اقتصادی مواقع پرغور کیا جائے گا۔ یہ ایک ورچوئل اجلاس ہوگا جس میں جی ٹوئنٹی ممالک سے تعلق رکھنے والے نوجوانوں‌ کے نمائندہ گروپوں کے قائدین شرکت کریں گے۔

اجلاس میں 8 ماہ سے تیار کیے گئے تین نکاتی ایجنڈے، نوجوانوں کی مستقبل کی تیاری، ان کے مستقبل کے چیلنجوں سے نمٹنے اور ان پر قابو پانے کی تیاری ، نوجوانوں کو بااختیار بنانے، ان میں قائدانہ صلاحیتوں کی نشوونما اور بدلتی دنیا میں نوجوان قیادت کی تیاری جیسے موضوعات پر بات چیت کی جائے گی۔

اس سمٹ میں ممبر ممالک کے نوجوان رہ نماؤں، مفکرین اور دیگر رہ نما جو اپنے معاشروں اور اقوام میں مثبت اثرات مرتب کرتے ہیں جی 20 ممالک میں نوجوانوں کی آواز کی نمائندگی کرنے ، چیلنجوں کا مقابلہ کرنے اور نوجوانوں کی آواز کو پوری دنیا تک پہنچانے کے لیے اپنی آرا پیش کریں گے۔

یوتھ گروپ آف ٹوئنٹی (وائی 20) کے صدر اور محمد بن سلمان فاؤنڈیشن "مسک چیریٹی" کے ریسرچ ڈائریکٹر عثمان المعمر نے کہا کہ "یوتھ سمٹ آف ٹوئنٹی (Y20) عالمی سطح پر نوجوانوں میں سب سے زیادہ بااثر ڈائیلاگ پلیٹ فارم ہے۔ یوتھ گروپ (وائی 20) کا سالانہ آٹھواں اجلاس ایک ایسے وقت میں منعقد کیا جا رہا ہے جب پوری دنیا کے نوجوان بالخصوص جی ٹونٹی گروپ کے نوجوان کرونا جیسی وبا کے ایک منفرد چیلنج کا سامنا کر رہے ہیں۔