.

مصری وزیراعظم کی کنوئیں میں اترنے کی تصویر عوامی توجہ کا مرکز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سوشل میڈیا پر مصری وزیراعظم مصطفیٰ المدبولی کی تازہ تصاویر نے عوام کی غیرمعمولی توجہ حاصل کی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ‌کے مطابق سوموار کے روز وزیراعظم المدبولی جنوبی قاہرہ میں سقارہ کے تاریخی اور ثقافتی مقام کا دورہ کیا جہاں انہیں ایک گہرے کنوئیں میں رسی کی مدد سے اترتے دیکھا جا سکتا ہے۔

مصری فوٹو گرافر سلیمان العطیفی نے بتایا کہ وزیراعظم ڈاکٹر مصطفیٰ المدبولی گذشتہ سوموار کو سقارہ کے علاقے میں گئے جہاں انہوں‌ نے 12 میٹر گہرے کنوئیں میں اترنے کی تجویز پیش کی۔ چنانچہ وزیراعظم کی فرمائش پر ایک رسی تیار کی گئی اور انہیں اس رسی کی مدد سے کنوئیں میں اتارا گیا۔ وزیراعظم نے سقارہ میں دیگر تاریخی اور ثقافتی مقامات کا بھی دورہ کیا جہاں ان کی تصاویر بنوائی گئیں۔

اس موقعے پر مصری آثار قدیمہ کی سپریم کونسل کے سیکرٹری جنرل مصطفیٰ وزیر نے بتایا کہ وزیراعظم مصطفیٰ المدبولی پہلے مصری عہدیدار ہیں جنہوں‌نے ثقافتی اور تاریخی مقامات کو اتنی زیادہ اہمیت دی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ موجودہ مصری وزیر ثقافت خالد العنانی بھی مصری ثقافت کے تحفظ کو غیرمعمولی اہمیت دے رہے ہیں۔

مصری وزارت ثقافت کے مطابق وزیراعظم ڈاکٹر مصطیٰ مدبولی، وزیر ثقافت ڈاکٹر خالد العنانی، وزیر سیاحت وآثار قدیمہ ڈاکٹر مصطفیٰ‌الوزیری اور دیگر عہدیداروں نے سقارہ میں آثار قدیمہ کے مراکز کا دورہ کیا۔