.

سعودی عرب یمن میں تعلیمی اداروں کے لیے کیسے مدد کر رہا ہے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی جانب سے یمن میں تعمیر نو اور بحالی کے ساتھ ساتھ تعلیمی اداروں کے لیے بھی الگ سے امداد فراہم کی جا رہی ہے۔ سعودی حکومت کی طرف سے یمن میں بحالی کے پروگرام کے تحت سیکڑوں اسکولوں کی تعمیر نو کے ساتھ ہزاروں طلبا وطالبات کی اسکولوں کی واپسی کی راہ ہموار کی ہے۔ مختلف تعلیمی پروگرامات کے ذریعے مملکت نے یمن میں ماڈل تعلیمی ادارے قائم کرنے کے ساتھ ساتھ یمن کے اسکولوں اور جامعات کے ساتھ مشترکہ منصوبوں پربھی کام جاری رکھا ہوا ہے۔

بائیس ماڈل اسکول

یمن میں سعودی عرب کے بحالی اور تعمیر نو پروگرام کے تحت 22 ماڈل تعلیمی ادارے قائم کیےگئے ہیں۔ ان تعلیمی اداروں میں جدید کمپیوٹر لیب، کھیل کے میدان، مختلف کھیلوں کےلیے ٹریننگ، طلبا کے کمرہ ہائے جماعت کے لیے فرنیچر، اسکول کی کرسیاں اور دیگر تمام ضروری سامان کی تیاری اور فراہمی میں مدد کی جا رہی ہے۔

حال ہی میں سعودی عرب نے مشرقی یمن کی المہرہ گورنری میں 8 ماڈل تعلیمی اداروں کا افتتاح کیا۔ سعودی عرب کے تعاون سے تعلیمی پروگرام کے نتیجے میں گورنری میں 10 ہار 952 طلبا وطالبات مستفید ہوں‌ گے۔

مستفید ہونے والی یمن کی گورنیاں

سعودی عرب کے بحالی اور ترقیاتی پروگرام کے تحت قائم کیے جانے والے اسکولوں سے کئی گورنریوں کے طلبا مستفید ہو رہے ہیں۔ ارخبیل سقطری گورنری میں دو ماڈل اسکول تعمیر کیے گئے ہیں۔ سرھن اور قلنسیہ اسکلووں کے قیام کے بعد ان کی طرز پر المہرہ میں 8 اسکول قائم کیے گئے۔ یہ اسکول نشطون، حوف، حصوین، المسیلہ، حی الجامعہ، سیحوت، قشن اور حی الاتصالات میں تعمیرکیےگئے۔ حجہ میں اس طرز کےدو تعلیمی ادارے شاہ فیصل بن عبدالعزیز اور علی بن ابو طالب اسکول زیرتکمیل ہیں۔ عبوری دارالحکومت دن میں 4 تعلیمی اداروں لطفی امان، سالم قطن، الحرم الجامعی اور بئر فضل کپر کام جاری ہے جب کہ حضرموت گورنری میں دو، المکلا میں میں ایک اور تعز میں بھی ایک اسکول کے قیام کی تیاری جاری ہے۔

دیگر تعلیمی پروجیکٹ

یمن میں سعودی عرب کے ادارہ برائے بحالی اور تعمیر نو نے اسکولوں کے لیے 6 ہزار ڈبل بنچ تیار کیے ہیں۔ ان میں سے ایک بنچ پر 4 طلبا بیٹھ سکتے ہیں۔ الجوف میں سعودی عرب کے تعاون سے الحزم الحجری اسکول کو اپ گریڈ کیا گیا۔ الجوف میں ام المومنین اسکول کی تعمیر نو، الروضہ اسکول، المہرہ میں اسکولوں کے متنوع فرنیچر، سقطری گورنری میں اسکولوں کے لیے فرنیچر کی فراہمی، سبا یونیورسٹی کے بعض شعبوں کو اپ گریڈ کرنے میں مدد اور عدن یونیورسٹی کے مختلف شعبوں کی بجالی جیسے منصوبے شامل ہیں۔

نصف ملین کتابیں

سعودی عرب کے یمن کے لیے ادارہ برائے بحالی اور تعمیر نو نے یمن میں اسکول کے طلبا کے لیے نصف ملین کتابوں کی طباعت و اشاعت کا کام کیا۔ان میں سے ارخبیل سقطری گورنری میں 2 لاکھ 10 ہزار 189 طلبا میں تقسیم کی گئیں جب کہ المہرہ میں ایک لاکھ 48 ہزار 263 اور اسی گورنری میں دوسرے فیز میں ایک لاکھ 90 ہزار 400 طلبا میں تقسیم کیا گیا تھا۔