.

مسجد حرام میں ساونڈ سسٹم کے لیے 120 انجینئر اور تکنیکی ماہرین مامور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

الحرمین الشریفین کے انتظامی امور کے ذمہ دار ادارے نے مسجد حرام اور حرم مکی میں صوتی نظام کو ٹھیک رکھنے کے لیے 120 انجینئر اور تکنیکی ماہرین تعینات کیے ہیں جو مسجد کےاندرونی اور بیرونی مقامات میں ساونڈ سسٹم کو مربوط اور بہتر بنانے کے لیے چوبیس گھنٹے اپنی خدمات انجام دیتے ہیں۔ مسجد کے اندرونی اور بیرونی احاطے میں مجموعی طور پر 6 ہزار اسپیکر لگائے گئے ہیں جنہیں جدید ترین اور ڈیجیٹل ساونڈ سسٹم کے ساتھ مربوط کیا گیا ہے۔

مسجد حرام کی آپریشن اینڈ مینٹیننس کی عمومی انتظامیہ نےآڈیو آپریٹنگ سسٹم کے لیے دو مقامات پر ساونڈ سسٹم نصب ہیں۔ ایک سسٹم مسجد حرام کی دوسری توسیع کے مقامات میں نصب ہے جب کہ اس کا ایک ذیلی نظام مسعیٰ کےمقام پر نئے ایمپلیفائر کے ماتحت ادارہ سے منسلک ہے۔ اس سسٹم کی نگرانی محسن السلمی کر رہے ہیں۔

السلمی نے اس بات کی نشاندہی کی کہ روزانہ نماز پنجگانہ میں ایک متوازن صوتی آہنگ کے ساتھ آواز کو تمام مقامات تک یکساں انداز میں پہنچایا جاتا ہے تاکہ آئمہ کرام نماز کے دوران اور موذن حضرات آذان کی آواز کو تمام سامعین تک پہنچایا جاسکے۔

انہوں نے مزید کہا کہ بحالی انجینئروں کو آواز کے منبع کے لیے بیک اپ مائیکروفون نصب کرنے کے لیے چوبیس گھنٹے کی بنیاد پر تین شفٹوں میں مامور کیا جاتا ہے۔ آواز کی خرابی کی صورت میں ماہرین خود کام کرتے ہیں۔ مرکزی یا ذیلی کنٹرول روم اسے کنٹرول کرتا ہے۔

کنٹرول رومز کے اندر آواز کا توازن اس طریقے سے تیار کیا گیا ہے جسے نمازیوں کو پریشانی کا سامنا نہ کر پڑے۔ آواز صرف مسجد کے اندر ہی نہیں بلکہ اس کے اطراف میں‌بھی پہنچائی جاتی ہے۔ آڈیو سسٹم ٹیلی ویژن اور میڈیا اسٹیشنوں کے لیے براہ راست ٹرانسمیشن سسٹم کے ساتھ منسلک ہے جو مرکزی آڈیو سسٹم یونٹ سے منسلک کنٹرول رومز سے بنایا گیا ہے۔