حوثیوں کے ہاں متعین ایرانی سفیر کا 'ٹویٹر' اکاونٹ بلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یمن میں حوثی باغیوں کے ہاں متعین ایرانی سفیر اور ایرانی پاسداران انقلاب کے متنازع لیڈر حسن ایرلو کا ٹویٹر اکاونٹ بلاک کر دیا گیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ‌ کے مطابق ایرانی میڈیا نے حسن اریلو کے ٹویٹر اکاونٹ کی بندش کی تصدیق کی ہے۔

حسن ایرلو چند روز قبل اس وقت منظرعام پرآئے تھے جب انہیں حوثیوں کی غیرتسلیم شدہ حکومت کے نام نہاد وزیر خارجہ ھشام الشرف کو ایک تقریب میں اپنی سفارتی اسناد پیش کرتے دیکھا گیا تھا۔

ایرلو کا کیئر سفارت کاری کے میدان میں‌نہیں رہا بلکہ ان کا شمار فوجی شعبے کے اینٹی ایئرکرافٹ اسلحہ کے ماہرین میں‌ ہوتا ہے اور وہ ماضی میں لبنانی ملیشیا حزب اللہ کے جنگجووں‌ کو بھی اسلحہ چلانے کی تربیت دے چکے ہیں۔

ایرلو کا پورٹو فولیو آج تک سامنے نہیں آسکا تاہم ایرانی ذرائع ابلاغ میں انہیں پاسداران انقلاب کا ایک عہدیدار ظاہر کر رہےہیں۔ ان کا شکار مقتول کمانڈقاسم سلیمانی کے مقربین میں ہوتا ہے جسے رواں سال جنوری میں امریکا نے بغداد کے ہوائی اڈے پر ڈرون حملے میں ہلاک کر دیا تھا۔

حسن ایرلو کے دو بھائی پاسداران انقلاب بریگیڈ کا حصہ بنے اور سنہ 1980ء‌ کی عراق۔ ایران جنگ میں ہلاک ہو گئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں