.

چاند اور ستاروں کی روشنی سے چمکتا سعودی عرب کا شہر ساحل اور صحرا کا حسین امتزاج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کےجنوبی علاقے عسیر کے'الخسعہ' شہر کو کئی اعتبار سے سیاحوں کی توجہ کامرکز مانا جاتا ہے۔ 'خسعہ' شہر کی سب سے بڑی قدرتی خوبی اس کا صحرا اورساحل پر مشتمل ہوناہے۔ بہت کم شہر ایسے ہوں گے جہاں ساحل اور صحرا کا آپس میں ملاپ بھی ہو اور ان کا موسم معتدل اور سیاحوں کے لیے موزوں ہو۔

'خسعہ' شہر اپنے سردی مائل موسم، صحرا کی وسعتوں اور ساحل کی کشش کی وجہ سے سیاحوں کے لیے اہم ترین مقام سمجھاجاتا ہے۔

'خسعہ' کو عسیر میں ساحلی پارک کا درجہ حاصل ہے۔ یہ شمال مغربی سعودی عرب - جو القحمہ کے مرکز سے 10 کلومیٹر جنوب میں واقع ہے۔ یہاں‌ کئی سیر گاہیں موجود ہیں جہاں سیاح اجتماعی شکل میں اور اپنے خاندانوں کے ساتھ پکنک منانے آتے ہیں۔ ان میں القحمہ کورنیش اہم مقام ہے۔ یہاں سے سمندر میں کشتی رانی اور سمندری سیاحت کے لیے کشتیاں چلتی ہیں اور سیاح صبح وشام یہاں لطف اندوز ہونے آتے ہیں۔

القحمہ سوئمنگ پول کو " 'خسعہ'" کہا جاتا ہے اور یہ القحمہ کے شہری علاقے سے باہر واقع ہے جو تقریبا 4 4 کلومیٹر پر پھیلا ہوا ہے۔ القحمہ اس کی خوبصورت ساحل اور حیرت انگیز لہروں کی خصوصیات کی وجہ سے مشہور ہے۔ یہاں سیاح آرام اور تفریح کے لیے آتے ہیں۔ یہ کیمپ لگانے کا پسندیدہ مقام ہے۔ ریت پر چلنا اور چاندنی سے لطف اندوز ہونے اور حیرت انگیز ستاروں کو دیکھنے سے لطف اندوز ہونے جا بہترین موقع ملتا ہے۔

Saudia arabiya: View of Moon

فوٹوگرافر علی المروعی نے 'خسعہ' کے ساحل پر ان حیرت انگیز مناظر کو تصاویر کی شکل میں‌مربوط کیا ہے۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے المروعی نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عید کے ایام اور تعطیلات کے دوران 'خسعہ'میں بہت زیادہ ہجوم ہوتا ہے۔ اس وجہ سے پرسکون اور چاندنی کی وجہ سے 'خسعہ' میں رات کے اوقات میں سمندری لہروں کے نظاروں کو چار چاند لگ جاتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ساحل سمندر میں سب سے پرانی ماہی گیری بندرگاہ ایک ہے۔ کد نبل جزیرے سے متصل اس کے مقام کی خوبصورتی ساحلی منظر اور ریتلے میدان سیاحوں کے لیے پرکشش اور تیراکی سمندری علاقہ تیراکی اور کشتی رانی کے لیے موزوں ہے۔