.

پانچ بچوں کی ماں فلسطین کی پہلی خاتون ٹیکسی ڈرائیور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فلسطینی علاقے غزہ کی پٹی میں پانچ بچوں کی ماں نے پہلی خاتون ٹیکسی ڈرائیور بن کر تاریخ رقم کر دی۔

خبر رساں ادارے 'اے ایف پی' کے مطابق نائلہ ابو جبہ نامی خاتون کے اس اقدام کو غزہ کی پٹی جیسے قدامت پسند علاقے میں ایک چھوٹے انقلاب سے تعبیر کیا جا رہا ہے۔

غزہ میں خواتین کو ڈرائیونگ کے وہی حقوق حاصل ہیں جو مرد ڈرائیورز کو حاصل ہیں لیکن کسی بھی خاتون کی جانب سے ٹیکسی چلا کر روزگار کمانے کی یہ پہلی مثال قرار دی جا رہی ہے۔

انتالیس سالہ نائلہ نے 'اے ایف پی' سے گفتگو میں کہا کہ "ایک دن میں نے اپنی ہیئر ڈریسر دوست سے کہا کہ میں خواتین کے لیے ٹیکسی سروس شروع کرنا چاہتی ہوں لیکن میری دوست نے اسے پاگل پن قرار دیا۔"