ابوظبی کے ولی عہد شیخ محمداوراسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو نوبل امن انعام کے لیے نامزد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے درمیان تاریخی معاہدہ ابراہیم طے کرنے میں کردار پر صہیونی وزیراعظم بنیامین نیتن یاہو اورابوظبی کے ولی عہد شیخ محمد بن زاید آل نہیان کو نوبل امن انعام کے لیے نامزد کیا گیا ہے۔

نیتن یاہو کے دفتر نے ایک بیان میں کہا ہے کہ 1998ء میں نوبل انعام پانے والے لارڈ ڈیوڈ ٹریمبل نے منگل کے روز ان دونوں لیڈروں کو نوبل امن انعام کے لیے نامزد کیا ہے۔خود لارڈ ڈیوڈ کو شمالی آئرلینڈ میں امن میں کردار پر نوبل امن انعام سے نوازا گیا تھا۔

ان کی نامزدگی کے بعد اب نوبل امن کمیٹی اسرائیلی وزیراعظم اور ابوظبی کے ولی عہد کے ناموں پرغور کرے گی۔ان دونوں لیڈروں کی نامزدگی سے قبل ناروے کی رکن پارلیمان کرسٹئین ٹائبرنگ جیڈی نے 9 ستمبر کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو معاہدۂ ابراہیم طے کرانے میں کردار پر نوبل امن انعام کے لیے نامزد کیا تھا اور کہا تھا کہ ان کے کردار کی بدولت ہی اسرائیل اور یو اے ای کے درمیان امن معاہدہ ممکن ہوا تھا۔

2021ء میں نوبل امن انعام جیتنے والوں کے ناموں کا اعلان آیندہ سال اکتوبر میں کیا جائے گا۔

یو اے ای نے 13 اگست کو اسرائیل کے ساتھ معمول کے سفارتی تعلقات استوار کرنے کے لیے تاریخی امن معاہدے کا اعلان کیا تھا ۔15 ستمبر کو یو اے ای کے وزیرخارجہ شیخ عبداللہ بن زاید آل نہیان اور بنیامین نیتن یاہو نے وائٹ ہاؤس میں امریکا کی ثالثی میں طے پانے والے معاہدۂ ابراہیم پر دست خط کیے تھے۔اس کے بعد مشرقِ اوسط کے متعدد صحافیوں اور تجزیہ کاروں نے ان تینوں لیڈروں کو نوبل امن انعام دینےکی تجاویز پیش کی تھیں۔

یواے ای نے مصر اور اردن کے اسرائیل کے ساتھ امن معاہدوں کے کوئی ربع صدی کے بعد معمول کے تعلقات استوار کیے ہیں اور اسرائیل سے معمول کے تعلقات استوار کرنے والا تیسرا عرب ملک ہے۔

اس کے بعد بحرین نے بھی اسرائیل کے ساتھ امن معاہدہ طے کیا تھا اور سوڈان نے بھی گذشتہ ماہ صہیونی ریاست سے معمول کے سفارتی تعلقات استوار کرنے کا اعلان کیا ہے لیکن دونوں ملکوں نے ابھی تک مجوزہ امن معاہدے پر دست خط نہیں کیے ہیں۔امریکی صدرٹرمپ کا کہنا ہے کہ بعض اورممالک بھی اسرائیل سے امن معاہدہ طے کرسکتے ہیں۔

قبل ازیں عرب ممالک میں سے مصر اور اردن کے اسرائیل کے ساتھ مکمل سفارتی تعلقات استوارتھے۔ مصر نے اسرائیل سے 1979ء میں کیمپ ڈیوڈ میں امن معاہدہ طے کیا تھا۔اس کے بعد 1994ء میں اردن نے اسرائیل سے امن معاہدے کے بعد سفارتی تعلقات قائم کیے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں