.

عرب ممالک میں پیر کی شب جزوی سایہ دار چاند گرہن ہو گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عرب ممالک میں کل یعنی سوموار کی شب 30 نومبر جزوی طور پر چاند گرہن ہو گا۔ عرب ممالک میں یہ سال 2020ء کا چوتھا اور آخری چاند گرہن ہو گا جو 4 گھنٹے 21 منٹ تک جاری رہے گا۔ یہ چاند گرہن مشرقی ایشیاء، آسٹریلیا اور امریکا میں بھی دیکھا جائے گا۔

جدہ میں فلکیاتی سوسائٹی کے سربراہ انجینئر ماجد ابو زہرا نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ یہ ایک جزوی اور معمولی سائے کی طرح کا گرہن ہوگا جو اس وقت ہوتا ہے جب چاند زمین کے سامنے کے بیرونی حصے کے سامنے آ جاتا ہے۔ اس طرح کے چاند گرہن کے دوران روشنی مدھم ہوجاتی ہے۔ چاند کی روشنی معمولی مدھم پڑتی ہے مگر پورا چاند روشن رہتا ہے اور چاند کا کوئی حصہ تاریک نہیں ہوتا۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہ چاند گرہن چاند کے مکمل ہونے کے تین دن بعد ہوتا ہے جو زمین سے اس کے مدار میں سب سے دوری پر ہونے سے ہوتا ہے۔ اس وقت اس کا ظاہری سائز اوسط سے 5.2 فی صد چھوٹا دکھائے گا۔

انہوں نے بتایا کہ چاند گرہن کے مراحل اسی وقت ہوں گے۔ چاند گرہن سعودی عرب کے مقامی وقت کےمطابق صبح 10:32 بجے کے چاند کے نیم سایہ والے علاقے میں داخل ہونا شروع ہو جائے گا۔ اس طرح چاند میں کوئی تبدیلی محسوس نہیں ہوگی اور چاند ہمیشہ کی طرح نمودار ہوگا۔