.

مملکت میں کرونا کی ویکسین لگوانا لازمی نہیں ہے: سعودی وزیر صحت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے وزیر صحت توفیق الربیعہ کا کہنا ہے کہ مملکت میں کرونا کے خلاف ویکسین کا استعمال ،،، لازمی نہیں بلکہ اختیار ہو گا۔

جمعرات کے روز ایک بیان میں ان کا کہنا تھا کہ "ہم اس بات کی شدید خواہش رکھتے ہیں کہ کرونا ویکسین کی خوراک سب کو فراہم کی جائے اور اس بات کے بھی خواہاں ہیں کہ ویکسین محفوظ ہو"۔

آج سامنے آنے والے براہ راست مناظر میں توفیق الربیعہ کو کرونا وائرس کی پہلی ویکسین لگواتے ہوئے دیکھا گیا۔ اس موقع پر سعودی وزیر صحت نے کہا کہ "آج بحران سے آزادی کا آغاز ہو گیا ہے"۔ انہوں نے باور کرایا کہ خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی ہدایات پر مملکت میں ویکسینیشن کا سب سے بڑا عمل شروع ہو گیا ہے۔ ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان ویکسینیشن کے عمل کا براہ راست اور باریک بینی سے جائزہ لے رہے ہیں۔

سعودی عرب میں شہریوں اور مقیم افراد نے کرونا کی مفت ویکسین لگوانے کا سلسلہ شروع کر دیا ہے۔ وزیر صحت توفیق الربیعہ نے تصدیق کی ہے کہ مملکت کے تمام صوبوں میں ویکسینیشن مراکز ہوں گے"۔

دوسری جانب وزارت صحت کی خصوصی کمیٹی نے باور کرایا ہے کہ ویکسینیشن کے عمل میں پہلے بڑی عمر کے افراد کو شامل کیا جائے گا۔ مملکت میں ڈرگ اینڈ فوڈ اتھارٹی کے مطابق سعودی عرب میں جس ویکسین کو منظور کیا گیا ہے وہ محفوظ ہے۔