.

سعودی عرب کی تاریخ میں پہلی ویکسین کب استعمال کی گئی ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ویکسین کو طبی نگہداشت کے شعبے میں ایک اہم کامیابی شمار کیا جاتا ہے۔ یہ انسان کو بیماریوں کے خلاف تحفظ فراہم کرتی ہے۔

سعودی عرب نے اپنی تاریخ میں پہلی ویکسین چیچک سے تحفظ کے واسطے استعمال کی۔

مریضوں کی سلامتی کے شعبے کے سعودی محقق اور تربیت کار سلمان المطیری نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ سعودی عرب میں ویکسین کی تاریخ کا آغاز 1925ء سے ہوتا ہے جب حکومت نے صحت کی دیکھ بھال اور طبی نگہداشت کی جانب توجہ دینا شروع کیا۔ مملکت میں پہلی ویکسین 1939ء میں چیچک کی بیماری سے تحفظ کے لیے استعمال کی گئی۔

المطیری نے مزید بتایا کہ مملکت کے بانی شاہ عبدالعزیز آل سعود نے ایک شاہی فرمان کے ذریعے صحت عامہ کا محکمہ قائم کیا جس کا صدر دفتر مکہ مکرمہ میں تھا۔ اس کے چند برس بعد 1925ء میں صحت عامہ اور ہنگامی حالت کا ڈائریکٹریٹ قائم کیا گیا۔ اس کا مقصد صحت اور ماحول کے امور پر توجہ دینا اور پوری مملکت میں ہسپتالوں اور صحت کے مراکز کا قیام عمل میں لانا تھا۔

سعودی محقق کے مطابق پیدائش کے سرٹفکیٹ کے ساتھ مربوط ویکسین پروگرام کو حکومت کی جانب سے بڑے پیمانے پر توجہ حاصل ہوئی۔ اس سلسلے میں 1979ء اور 1983ء میں دو شاہی فرمان بھی جاری کیے گئے۔ ان کے تحت پیدائش کے سرٹفکیٹ کے اجرا کو بنیادی ویکسین کا کورس مکمل کرنے کے ساتھ جوڑ دیا گیا۔ بعد ازاں 1988ء میں تیسرا شاہی فرمان جاری ہوا جس کا مقصد تمام بچوں کو ویکسین کے ذریعے جگر کے وائرل انفیکشن سے تحفظ فراہم کرنا تھا۔

سعودی عرب میں جمعرات کے روز کرونا کی وبا کے خلاف سب سے بڑی ویکسین مہم کا آغاز ہوا۔ مہم کے پہلے مرحلے میں 65 برس سے زیادہ عمر کے افراد اور ان پیشوں میں کام کرنے والوں کو ویکسین لگائی جائے گی جن کو اس متعدی مرض کا شکار ہونے کا خطرہ زیادہ ہے۔