عراق میں دو جڑواں بہنوں کو بے دردی سے قتل کرنے والا ان کا حقیقی بھائی گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

عراق میں پولیس نے الصدر شہر میں اپنی دو حقیقی بہنوں کو بے دردی کے ساتھ گولیاں مار کر قتل کرنے کے جرم میں ملوث ان کے بھائی کو گرفتار کر لیا ہے۔

یہ ہولناک واقعہ گذشتہ ہفتے کو مشرقی بغداد میں الصدر شہرمیں پیش آیا۔ پولیس کا کہنا ہےکہ اس نے سوموار کے روز ملزم رافد صباح کو گرفتار کرلیا ہے۔ اس کی عمر بیس سال کے درمیان ہے۔ پولیس کا کہنا ہےکہ ابتدائی تفتیش کے دوران ملزن نے اقبال جرم کرتے ہوئے بہنوں کو بے دردی کے ساتھ موت کے گھاٹ اتارنے کا اعتراف کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق حورا اور الزھرا عراق کی امام الصادق یونیورسٹی کی طالبہ تھیں۔ دونوں کو ان کے بھائی نے نشے کی حالت میں فائرنگ کرکے قتل کر دیا تھا۔ ہفتے کے روز پیش آنے والے اس واقعے میں پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم نے پہلے اپنی بہن حوراء کو شیشے کے ٹکڑے سے زخمی کیا۔ جب اس نے چیخ پکار شروع کی تو لڑکے نے اسے اندھا دھند فائرنگ کرکے قتل کردیا۔ اس کی بہن الزھرا یہ سب کچھ دیکھ کر باہر بھاگی اور پڑوسیوں سے مدد کے لیے پکارنے لگی مگر ملزم نے اسے بھاگتے ہوگئے چار گولیاں ماریں جس کے نتیجے میں وہ بھی موقعے پر ہلاک ہو گئی جب کہ ملزم فرار ہو گیا۔

مقامی اخبارات میں شائع ہونے والی خبروں میں‌ بتایا گیا ہے کہ ملزم نے رات کے وقت بہنوں کے کمرے میں داخل ہو کر ان کے ساتھ کسی بات پر تکرار شروع کردیا۔ اس وقت وہ حورا کی شادی کی تیاریوں میں مصروف تھیں جس کی آئندہ ماہ شادی طے تھی۔ تکرار کے دوران اس نے حورا کو چھ گولیاں مار کر قتل کردیا اور الزھرا کو بھاگتے ہوئے گولیاں ماری گئیں۔ ملزم کا کہنا ہے کہ اس نے غیرت کے نام پر ایسا کیا ہے تاہم پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم حملے کے وقت شدید نشے میں تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں