.

جسمانی طور پر جُڑی یمنی بچیاں علاج کے لیے سعودی عرب منتقل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں‌جسمانی طور پر جڑی دو یمنی بچیوں‌کو علاج کے لیے سعودی عرب منتقل کردیا گیا ہے۔ بچیوں کے ان کے والدین کے ہمراہ صنعا سے سعودی عرب کے دارالحکومت الریاض کے شاہ سلمان ہوائی اڈے پر ایک طیارے کے ذریعے پہنچایا گیا۔ ان بچیوں‌کو یمن کے علاقے حضر موت کے المکلا شہر سے لایا گیا۔ دونوں‌ بچیوں‌کو خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود کی خصوصی ہدایت پر سعودی عرب منتقل کیا گیا۔

دونوں‌بچیوں‌ کو وزارت برائے نیشنل گارڈ کے زیرانتظام شاہ عبداللہ چلڈرن اسپتال منتقل کیا گیا۔ ڈاکٹروں نے بچیوں کی سرجری کے لیے ان کا طبی معائنہ شروع کر دیا ہے۔

جڑواں بچیوں کے والدین احمد سعید صالح‌ محیمود اور فاطمہ سعد عقیل سالم نےبچیوں کے علاج میں معاونت کرنے پر خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان اور سعودی قیادت کا شکریہ ادا کیا ہے۔

سعودی عرب میں شاہی دربار کے مشیر اور شاہ سلمان ریلیف مرکز کے جنرل سپر وائزر اور میڈیکل ٹیم کے چیئرمین ڈاکٹر عبداللہ الربیعہ نے یمن جیسے آفت زدہ اور جنگ زدہ ملک کے عوام کی بہبود کے لیے خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز آل سعودی کی خدمات کو سراہتے ہوئے بچیوں‌ کے علاج میں‌معاونت پر ان کا شکریہ ادا کیا ہے۔