امارات نے اسرائیلیوں کے لیے بغیر ویزا سفر کا معاہدہ معطل کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

اسرائیلی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ متحدہ عرب امارات نے اسرائیلی شہریوں کے لیے بغیر ویزا سفر کا معاہدہ یکم جولائی تک معطل کر دیا ہے۔ یہ فیصلہ کرونا وائرس کی وبا کے پھیلاؤ کے سبب کیا گیا ہے۔

پیر کے روز وزارت خارجہ کے بیان میں بتایا گیا کہ معاہدہ معطل رہنے تک امارات کے سفر کے خواہش مند اسرائیلی شہریوں کو ویزا حاصل کرنا ہو گا۔ اسی طرح اسرائیل کا سفر کرنے کی کوشش کرنے والے اماراتی شہریوں کے لیے بھی ویزا لازمی ہو گا۔

بلومبرگ کی رپورٹ کے مطابق اسرائیلی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ امارات نے یورپ کے اکثر ممالک، بھارت اور پاکستان سے آنے والوں کے لیے بھی مماثل اقدام کیا ہے۔

اسرائیل میں اس وقت تیسرا لاک ڈاؤن جاری ہے۔ اس لاک ڈاؤن میں 21 جنوری کے بعد توسیع کیے جانے کا امکان زیر بحث ہے۔ اس لیے کہ کرونا کے نئے کیسوں کے اندراج کا تناسب ابھی تک بلند ہے۔

امارات نے اسرائیل کے ساتھ ویزے کے بغیر سفر کے معاہدے کی منظوری گذشتہ ہفتے دی تھی۔ اس معاہدے کو 30 روز بعد نافذ العمل ہونا تھا۔

یہ سمجھوتا گذشتہ برس ستمبر میں دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات کے قیام کا معاہدہ طے پانے کے بعد سامنے آیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں