.

غربِ اردن:اسرائیلی فوجیوں نے فلسطینی کوگولی مار کر شہید کردیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مقبوضہ مغربی کنارے کے شہر نابلس کے نزدیک اسرائیلی فوجیوں نے ایک فلسطینی کو گولی مار کر شہید کردیا ہے۔اسرائیلی فوج نے دعویٰ کیا ہے کہ فلسطینی چاقو سے مسلح تھا اور اس نے فوجیوں کو چاقو گھونپنے کی کوشش کی تھی۔

اسرائیلی فوج نے منگل کے روز ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’غربِ اردن میں ایک فوجی چوکی پر اس حملہ آور کو روکا گیا تھا۔اس نے دو فوجیوں پر چاقو کے وار کرنے کی کوشش کی تھی۔‘‘

اس نے دعویٰ کیا ہے کہ ایک فوجی نے اس فلسطینی کے چاقو کے متعدد وار روکے تھے۔اس دوران میں وہاں تعینات فوجیوں کے کمانڈر نے اس پر گولی چلا دی تھی اور اس کو جان سے مار دیا تھا۔

اس بیان میں واضح کیا گیا ہے کہ اسرائیلی فوجیوں کا کوئی جانی نقصان نہیں ہوا ہے۔دوسری جانب فلسطین کی وزارت صحت نے اس امر کی تصدیق کی ہے کہ قابض فورسز نے ایک شہری کو گولی مار کر موت کی نیند سلا دیا ہے۔

یادرہے کہ اسرائیلی فوج نے1967 کی چھے روزہ جنگ کے بعد سے غربِ اردن پر قبضہ کررکھا ہے اور صہیونی فوجی آئے دن اس طرح نہتے فلسطینیوں پر ظلم کے پہاڑ توڑتے رہتے ہیں۔