.

مملکت میں سیاحت کی صنعت کو ترقی دینے کے لیے "کروز سعودی" کمپنی متعارف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں پبلک انویسٹمنٹ فنڈ نے کل جمعرات کے روز "کروز سعودی" کمپنی متعارف کرائی ہے۔ اس کا مقصد مملکت میں سیاحت کے سلسلے میں بحری سفر کے سیکٹر کا قیام ہے۔ ساتھ ہی مملکت کی ان کوششوں کو مضبوط کرنا ہے جن کا مقصد سعودی عرب کو بین الاقوامی سیاحت کے سمندری اسفار کے نقشے پر بطور سیاحتی منزل اجاگر کرنا ہے۔ اس طرح سیاحت کے سیکٹر کو سعودی ویژن 2030ء پروگرام سے ہم آہنگ کیا جا سکے گا۔

کروز سعودی کمپنی کا صدر دفتر بحر احمر کے ساحل پر جدہ شہر میں واقع ہے۔ یہ کمپنی مملکت کے کئی شہروں میں سیاحتی بندرگاہوں کی ترقی کے عمل میں ایک تزویراتی پل ثابت ہو گی۔ اس کا مقصد ایسا مربوط سیاحتی تجربہ پیش کرنا ہے جو مملکت میں سیاحت کے سیکٹر کے ساتھ مطابقت رکھتا ہو۔

سعودی سرکاری خبر رساں ایجنسی "ایس پی اے" کے مطابق کروز سعودی کمپنی متعلقہ اداروں کی شراکت سے سیاحتی مقامات کو ترقی دے گی۔ اس سلسلے میں سیاحتی مہمانوں کو غیر معمولی تجربے سے لطف اندوز ہونے کا موقع فراہم کیا جائے گا۔ ساتھ ہی وہ سعودی ثقافت اور تاریخی ورثے کو بھی دریافت کر سکیں گے۔

کروز سعودی کمپنی کا آغاز مملکت میں پبلک انویسٹمنٹ فنڈ کی 2021ء سے 2025ء تک کی حکمت عملی کے مطابق ہے۔ اس حکمت عملی میں مرکزی توجہ تابناک مستقبل کے حامل نان آئل سیکٹروں کی صلاحیتوں کو سامنے پر مرکوز ہے۔ اس کا مقصد مملکت کی ان کوششوں کو مضبوط بنانا ہے جو وہ تیل سے دور رہ کر آمدنی کے ذرائع کو متنوع بنانے کے واسطے کر رہی ہے۔ پبلک انویسٹمنٹ فنڈ اور اس کی زیر انتظام کمپنیوں کا ہدف ہے کہ سال 2025ء کے اختتام تک مجموعی مقامی پیداوار میں نان آئل ریونیو کا حصہ 12 کھرب ریال تک پہنچایا جائے۔

اس سلسلے میں مذکورہ فنڈ سیاحتی مقامات سے استفادے کا ارادہ رکھتا ہے۔ اسی طرح مملکت میں تاریخی اور ثقافتی ورثے کو بھی کام میں لایا جائے گا۔ اس کے علاوہ مملکت کے اندر جغرافیائی تنوع ہدف کی تکمیل میں اہم کردار رکھتا ہے۔