حوثیوں کی نمائش کردہ تصاویر سے ایک ہی ضلع کے 1000 جنگجوؤں کی ہلاکت کا انکشاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ایسے وقت میں جب کہ درجنوں یمنی خاندان حوثی ملیشیا کی جانب سے لڑائی کے میدانوں میں جھونک دیے جانے والے اپنے بیٹوں کا انجام جاننے کا مطالبہ کر رہے ہیں ،،، ایران نواز ملیشیا کی جانب سے صنعاء میں تصویری نمائش نے ایک ہی ضلع سے بھرتی کیے جانے والے ایک ہزار سے زیادہ افراد کی ہلاکت کا انکشاف کیا ہے۔

آبادی کے لحاظ سے صنعاء صوبے کے دوسرے بڑے ضلع "معین" کے لوگوں نے الزام عائد کیا ہے کہ ان کے گھرانوں اور خاندانوں کے نوجوانوں اور کم سن بچوں کو اغوا کرنے کے پیچھے حوثی ملیشیا کا ہاتھ ہے۔ مزید یہ کہ ان افراد کو فرقہ واریت پر مبنی اور عسکری نوعیت کے تربیتی کورسز کرائے گئے۔ بعد ازاں انہیں جنگ کا ایندھن بنا دیا گیا۔ یہ بات عربی روزنامے الشرق الاوسط کی ایک رپورٹ میں بتائی گئی ہے۔

درجنوں یمنی خاندانوں نے اپنے لا پتہ بیٹوں کی تصاویر کو اجتماعی صورت میں پارلیمنٹ کی نئی زیر تعمیر عمارت کی دیوار پر معلق دیکھا۔ یہ تصاویر ملیشیا کی جانب سے اپنے ہلاک شدگان کی برسی منانے کی تقریب کے دوران سامنے آئیں۔

بھرتی شدہ مقتولین کے اہل خانہ کی جانب سے دباؤ کے سبب حوثی ملیشیا ایرانی طریقے کار پر درجنوں تصویری نمائشیں انجام دیں۔ ان میں صنعاء صوبے کے تمام اضلاع سے تعلق رکھنے والے ہلاک شدگان جنگجوؤں کی تصاویر پیش کی گئیں۔ ان میں معین ضلع سرفہرست ہے۔

حوث ملیشیا نے صنعاء میں شارع الستین پر واقع پارلیمنٹ کی نئی عمارت کی بیرونی دیوار پر 1060 مقتولین کی تصاویر آویزاں کیں۔ ان میں اکثریت نوجوانوں اور بچوں کی ہے جن کا تعلق معین ضلع کے تین علاقوں سے ہے۔

دوسری جانب یمن کے وزیر خارجہ احمد عوض بن مبارک نے انکشاف کیا ہے کہ حوثی ملیشیا کی جانب سے بچوں کے استحصال کا سلسلہ جاری ہے۔ وہ بچوں کو بھرتی کر کے انہیں اپنی صفوں میں جنگجوؤں اور انسانی ڈھالوں کے طور پر استعمال کر رہی ہے۔

یمن میں بہت سے صوبوں میں نوجوانوں کو پھسلانے اور بچوں کو اٹھا لیے جانے کا سلسلہ جاری ہے۔ حوثی ملیشیا کی قیادت وسیع پیمانے پر بھرتیوں کی نگرانی کر رہی ہے۔ ان کارروائیوں میں بنیادی ہدف گنجان آباد اور شدید غربت کا شکار علاقے اور دیہات ہیں۔ یہاں حوثی ملیشیا لوگوں کی ضرورتیں پوری کرنے کے ذریعے فائدہ اٹھا کر انہیں لڑائی کے محاذوں پر شریک ہونے کے لیے مجبور کرتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں