.

رغد صدام کا العربیہ کو انٹرویو، عراق کی سیاست میں حصہ لینے کا عزم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے سابق مرد آہن مصلوب صدام حسین کی جلا وطن صاحب زادی رغد صدام 'العربیہ' نیوز چینل کو دیئے گئے ایک انٹرویو میں عراق میں واپسی اور ملک میں سیاسی سرگرمیوں میں حصہ لینے کے عزم کا اظہار کیا ہے۔

مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ 'ٹویٹر' پر پوسٹ کردہ ایک ٹویٹ میں رغد صدام نے اپنے مداحوں اور ناظرین کو پیغام دیا کہ وہ آئندہ ہفتے 'العربیہ چینل' پر نشر ہونے والے ان کے انٹرویو کو ضرور دیکھیں۔

انہوں‌ نے العربیہ کے نامہ نگار صہیب شرایر کو دیے گئے انٹرویو میں کہا ہے کہ وہ عراق میں آنے والے وقت میں سیاسی کردار ادا کرنا چاہتی ہیں۔

انہوں نے گفتگو کے دوران عراق میں ایرانی مداخلت روکنے اور عراق کی تمام قوتوں کے درمیان اتحاد کی ضرورت پر زور دیا۔

اس کے علاوہ رغد نے اپنے انٹرویو میں اپنے والد کے ٹرائل کی تفصیلات بھی بیان کی ہیں اور بتایا کہ اس وقت ان کے والد کی لاش کہاں دفن ہے۔ رغد کا کہنا ہے کہ میرے بھائیوں عدی اور قصی کو دھوکہ دہی سے قتل کیا گیا۔ انٹرویو میں رغد نے اپنے والد کی زندگی کے بعض یادگار واقعات اور اپنی حسین کامل کے ساتھ شادی اور اس کے قتل کے بارے میں‌ بھی گفتگو کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں