.

اسرائیلی بمباری کے خوف سے روس نے شام کا 'T4 ' فوجی اڈہ خالی کردیا

ایرانی ملیشیا کا اڈے پر قبضہ برقرار رکھنے پر اصرار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روس نے شام کے صوبہ حمص کے مشرقی علاقے میں قائم'T4 ' نامی فوجی اڈے پر موجود فوج اور اسلحہ وہاں سے تدمر فوجی اڈے اور مھین کے گوداموں میں منتقل کردیا ہے۔ روس نے یہ اقدام T4 فوجی اڈے کو فضائی حملوں سے نشانہ بنائے جانے کے خدشے کے تحت کیا ہے۔
باوثوق ذریعے نے 'عین الفرات' نیوز ویب سائٹ کو بتایا کہ روسی فورسز نے ٹی فور فوجی اڈے کو مکمل طورپرخالی کردیا ہے۔ ذریعے کا کہنا ہے کہ لاجسٹک آلات، گولہ بارود، بھاری ہتھیاروں کو 16 ٹرکوں پر لاد کر وہاں سے لے جایا گیا۔ اس کے علاوہ سات فوجی گاڑیاں، فوجیوں‌کو لے جانے والے چار ٹرک مشری شاہرا سے تدمر فضائی اڈے پر منتقل کیے گئے۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ روس نے 'T4 ' فوجی اڈے کو ایک ایسے وقت میں خالی کیا ہے جب دوسری طرف ایرانی ملیشیا نے حمیمیم فوجی اڈے کو خالی کرنے سے انکار کردیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ روس کو خدشہ ہے کہ اسرائیل کسی بھی وقت 'T4 ' فوجی اڈے کو بمباری کا نشانہ بنا سکتا ہے۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ 'T4 ' فضائی اڈے پر اس وقت ایرانی ملیشیا کا کنٹرول ہے جس کے باعث یہ اڈہ کسی بھی وقت اسرائیلی بمباری کا نشانہ بن سکتا ہے۔ اسرائیل کی کوشش ہے کہ مشرقی حمص میں‌واقع یہ اڈا ایرانی ملیشیا کا بڑا مرکزنہ بن سکے۔