.

ہوائی جہاز میں دوران سفر بیمار خاتون کی جان بچانے والی سعودی نرس سے ملیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں سوشل میڈیا اور ذرائع ابلاغ میں ایک نرس کی تحسین کی جا رہی ہے جس نے ہوائی جہاز میں سفر کے دوران اچانک بیمار ہونے والی خاتون کو فوری طبی امداد فراہم کرکے اس کی جان بچائی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے سعودی نرس میثا الغزی نے بتایا میں عرعر شہرسے الریاض کی جانب اپنے بیٹے کے ہمراہ ہوائی جہاز میں سفر کررہی تھی۔ اس دوران جہاز میں موجود ایک خاتون اچانک بے ہوش ہو کر گر پڑی۔ میں نے بےہوش خاتون کوانسانی بنیادوں پر فوری طبی امداد فراہم کی تاکہ اسے ڈاکٹر تک پہنچائے سے قبل اس کی فوری مدد کی جاسکے۔

اس نے بتایا کہ مریض چالیس سال کے درمیان تھی اور وہ شوگر کی کمی کے باعث بے ہوش ہوگئی تھی۔ میں نےاسے 15 منٹ تک طبی معاونت فراہم کی۔ میثا کا کہنا تھا کہ دوران سفر یہ پہلا کیس نہیں جس میں اس نے کسی مریضہ کی طبی مدد کی ہے۔ وہ پہلے بھی ایسے کئی کیسز نمٹا چکی ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں سعودی نرس کا کہنا تھا کہ وہ 26 سال سے عرعر کے اسپتال میں پیشہ وارانہ خدمات انجام دے رہی ہے۔ جہاز میں بیمار ہونے والی خاتون کو طبی امداد فراہم کرنے پر شمالی سرحد کے گورنر نے مجھے اپنے دفتر میں شرف بار یابی بخشا۔ اس کا کہنا تھا کہ خادم الحرمین الشریفین کی حکومت میں خواتین کی حوصلہ افزائی اور ان کی خدمات کی تحسین کوئی انوکھی بات نہیں۔
ادھر شمالی علاقہ جات کے گورنر شہزادہ فیصل بن خالد بن سلطان بن عبدالعزیز نے میثا الغزی اور اس کے بیٹے لیب کے امور کے ماہر عبداللہ الغزی کو اپنے دفتر میں ‌دعوت دے کر ان کی خدمات کو سراہا۔