.

ایران نے ہمارے جہاز کو نشانہ بنا کر مذاکرات کے لیے پوزیشن بہتر بنانے کی کوشش کی: اسرائیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیل نے الزام عاید کیا ہے کہ ایران نے خلیج میں اس کے جہاز کو نشانہ بنا کرمغرب کے ساتھ بات چیت کی پوزیشن بہتر بنانے کی کوشش کی ہے۔

اسرائیلی وزیر دفاع بینی گینٹز نے کہ ہمارے جہاز پر ایران کا حملہ اپنی مذاکرات کی صورتحال کو بہتر بنانے کی ایک کوشش تھی۔

وزیر دفاع کا یہ الزام اسرائیلی وزیر اعظم نیتن یاھو نے پیر کے روز ایران پر اسرائیلی جہاز کو نشانہ بنانے کے الزام کے بعد سامنے آیا ہے۔ نیتن یاھو کا کہنا تھا کہ تل ابیب تہران نے اہداف پر مسلسل حملے کرتا رہے گا۔ اس بیان کے بعد اسرائیل نے شام میں ایرانی تنصیبات پر میزائل حملہ کیا۔ شامی حکومت نے اس حملے کو ناکام بنانے کا دعویٰ کیا ہے۔

ایران نے گذشتہ ہفتے خلیج عمان میں "ایم وی ہیلیوس رے" جہاز کو نشانہ بنانے میں ملوث ہونے کی سختی سے تردید کی ہے۔

اسرائیل کے 'کے اے این' ٹی وی چینل کو دیے گیے ایک بیان میں نیتن یاھو نے کہا کہ یہ ایک ایرانی کارروائی ہے۔ انہوں‌ نے دھمکی دی کہ ایران کو جواب کے بارے میں میری پالیسی معلوم ہے۔ ایران اسرائیل کا سب سے بڑا دشمن ہے اور میں اس کے خلاف کھڑا ہونے کا عزم کرتا ہوں۔ پورے خطے میں ہم ہرجگہ ایران کا پیچھا کریں‌ گے اور اس کے اہداف پر حملے کریں گے۔

لندن میں قائم "ڈرائیڈ گلوبل" نامی گروپ کے مطابق کارگو جہاز "ایم وی ہیلیوس رے" سنگاپور جا رہا تھا جب جمعرات کے روز شمال مغربی خلیج عمان میں اس کا دھماکا ہوا۔