.

سعودی عرب میں قدیم اسلامی سکوں کی وجہ سے شہرت پانے والا شہر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے جنوب مغربی علاقے جدہ شہرمیں 'شہر طیبات' کے نام سے ایک ایسا شہر آباد ہے جو اپنی منفرد قدیم طرز تعمیر کی بہ دولت شہرت رکھنے کے ساتھ ساتھ قدیم اسلامی سکوں کی وجہ سے بھی مشہور ہے۔
مدینہ طیبات جدہ کا ایک نمایاں مقام ہے جو اپنے منفرد طرز تعمیر، سنگ مرمر، لکڑی سے تعمیر اور مرجانی چٹانوں کی وجہ سے مشہور ہے۔
اس شہر میں تین ایسے عجائب گھر ہیں جن میں قدیم اور جدید ثقافتی خزانہ محفوظ ہے۔ یہ شہر اسلامی طرز تعمیر، اسلامی تہذیب وثقافت اور پرانی سعودی تاریخ وتمدن کی ایک زندہ علامت ہے۔


مدینہ طیبات میں واقع عجائب گھروں کے جنرل سپر وائزر یوسف الکیکی نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ مدینہ طیبات 1987ء میں الشیخ عبدالرئوف خلیل نے آباد کیا۔ یہ سائنس وٹیکنالوجی کا بھی مرکز ہے ۔ اس کا رقبہ 10 ہزار مربع میٹر ہے۔ اس میں‌ موجود عجائب چار منزلہ عمارت میں 120 شاخیں ہیں۔ پہلی منزل پر اسلامی تہذیب وتمدن کی شاخ،دوسری پر سعودی عرب کی تہذیب ثقافت اور تیسری منزل پر عمومی ثقافتی نوادرات اور عجائبات محفوظ ہیں۔


انہوں نے کہا کہ مدینہ طیبات صرف عالمی نوادرات کے عجائب گھروں‌پر ہی مشتمل نہیں بلکہ یہ اسلامی تہذیب و ثقافت کا بھی مرکز ہے۔ یہاں پر الفرقان مرکز برائے تعلیم القرآن بھی قائم ہے۔ یہاں پر میوزیم کے بانی الشیخ عبدالروئف حسن خلیل کی رہائش گاہ، ایک پبلک لائبریری، مسجد اور ایک بڑی نشست گاہ بھی سیاحوں کی توجہ کا مرکز ہے۔


انہوں نے مزید کہا کہ میوزیم میں بہت سے آثار قدیمہ اورثقافتی ورثے کے نمونے موجود ہیں۔ ان میں مچھلیوں کے 350 ملین پرانے فوسلز، پودوں کی باقیات، پلاسٹر ، مٹی کے برتن ، سجاوٹ اور لکڑی سے تیار کردہ اشیا کے نمونے موجود ہیں۔ یہاں پر ایک بڑا کانفرنس ہال ہے اور ایک تحفیظ القرآم مرکز ہے جس میں 1200 طلبا حفظ کرتے ہیں۔