.

یمن کی آئینی فوج کی مدد جاری رکھیں گے: ترکی المالکی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں آئینی حکومت کے دفاع کے لیے سرگرم عرب فوجی اتحاد کے ترجمان بریگیڈیئر جنرل ترکی المالکی نے کہا ہے کہ عرب اتحاد یمنی فوج کی مدد جاری رکھے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ حوثی ملیشیا کی طرف سے مسلط کی گئی جنگ کے خلاف یمنی فوج کی مدد جاری رکھی جائے گی۔

یمن کے جنگ زدہ علاقے مآرب کے دورے کے موقعے پر ایک بیان میں ترکی المالکی نے کہا کہ مآرب گورنری میں اب زندگی معمول کی طرف لوٹ رہی ہے۔

میڈیا کے نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مآرب حوثی ملیشیا کا قبرستان ثابت ہوگا۔ ان کا کہنا تھا کہ حوثی ملیشیا کو مارب میں جنگ کے لیے بھیجے گئے جنگجوئوں کی زندگی کی کوئی پرواہ نہیں ہے۔

بریگیڈیئر جنرل ترکی المالکی نے کہا کہ 'فیصلہ کن طوفان' آپریشن کا مقصد یمنی عوام کا تحفظ یقینی بنانا اور عالمی سطح پر تسلیم شدہ یمنی حکومت کی حمایت اور اس کی رٹ قائم کرنے میں اس کی مدد کرنا ہے۔

ادھر یمنی فوج نے گذشتہ روز مآرب میں ہونے والی لڑائی میں کئی اہم مقامات حوثی ملیشیا کے قبضے سے آزاد کرا لیے۔ ان کارروائیوں میں حوثی ملیشیا کو بھاری جانی اور مالی نقصان اٹھانا پڑا ہے۔

یمنی فوج نے عرب اتحادی فوج اور مزاحمت کاروں‌ کی مدد سے شمال مغربی مارب میں حوثی ملیشیا کے خلاف اہم کامیابی حاصل کی ہے۔ اس لڑائی میں حوثی باغیوں کو بھاری جانی نقصان پہنچایا گیا ہے۔