.

دبئی : ایک منٹ کے اندر کرونا کی تشخیص کرنے والے ٹیسٹ کا تجربہ جاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

دبئی میں کرونا وائرس کے ایک نئے ٹیسٹ کی درستی کا جائزہ لینے کے لیے 'کلینیکل ایکسپیریمنٹ' کا سلسلہ جاری ہے۔ سانس کے اس ٹیسٹ کے ذریعے ایک منٹ کے اندر مذکورہ وائرس کا پتہ چلایا جا سکے گا۔

اس ٹیسٹ کو سنگاپور کی نیشنل یونیورسٹی کے زیر انتظام کمپنی "بریزونکس" نے متعارف کرایا ہے۔ ٹیسٹ کی جانچ 2500 رضا کاروں پر کی جا رہی ہے۔ کمپنی حکام کے مطابق ٹیسٹ کا تجربہ دبئی میں ہیلتھ اتھارٹی اور محمد بن راشد یونیورسٹی فار میڈیسن اینڈ ہیلتھ سائنسز کے ساتھ مل کر کیا جا رہا ہے۔

بریزونکس کمپنی کے مطابق اس ٹیسٹ میں سانس کے نمونے کی جانچ کی جائے گی اور اس کا نتیجہ 60 سیکنڈ سے بھی کم وقت میں سامنے آ جائے گا۔

کمپنی کا کہنا ہے کہ اس نے سنگاپور میں 180 مریضوں پر اس ٹیسٹ کا تجربہ کیا ہے۔ اس دوران میں درستی کا تناسب 93% اور معیار کا تناسب 95% تک رہا۔

دبئی میں رواں برس کے اختتام تک تمام بالغ افراد کو کرونا ویکسین دینے کا عمل مکمل کرنے کی منصوبہ بندی کی گئی ہے۔

گذشتہ نومبر سے دبئی سمیت متحدہ عرب امارات میں کرونا وائرس سے متاثرین کی یومیہ تعداد 4 گُنا ہو چکی ہے۔ متاثرین کی بڑھتی ہوئی تعداد نے دبئی کے حکام کو ایک بار پھر سے ہوٹلوں اور فضائی سفر پر پابندی عائد کرنے پر مجبور کر دیا۔

امارات نے 'فائزر' اور 'بائیو این ٹیک' کمپنیوں کے علاوہ چینی کمپنی 'سینوفارم' کی تیار کردہ کرونا ویکسین کے استعمال کی منظوری دی تھی۔ اسی طرح حکام نے ہنگامی حالت میں روس کی تیار کردہ "اسپوٹنک" ویکسین کے استعمال کی بھی اجازت دے رکھی ہے۔