.

عدن میں 'معاشیق' صدارتی محل پر ڈرون حملہ ناکام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

العربیہ اور اس کے برادر ٹی وی چینل 'الحدث' نے بتایا ہے کہ کل بدھ کے روز یمن کے عبوری دارالحکومت عدن میں قائم 'معاشیق' صدارتی محل پر ڈرون حملہ کیا گیا تاہم یمنی فوج نے ڈرون کو مار گرا کر حملہ ناکام بنا دیا۔

یہ ڈرون حملہ ایک ایسے وقت میں ہوا ہے جب منگل کے روز مظاہرین کے ایک گروپ نے احتجاج کرتے ہوئے معاشیق صدارتی محل پر دھاوا بول دیا تھا۔ مظاہرین بنیادی ضروریات کی فراہمی،تنخواہوں کی ادائیگی، کرنسی کی قیمت بہتر بنانے اور ملک کی ابتر معاشی صورت حال کو بہتر بنانے کا مطالبہ کررہے تھے۔ دوسری طرف یمنی حکومت نے اس احتجاجی مظاہرے کو غیرقانونی قرار دیتے ہوئے مشتعل ھجوم کے خلاف کارروائی کا فیصلہ کیا ہے۔

منگل کی رات یمنی حکومت نے ایک بیان میں کہا تھا کہ عدن کے عبوری دارلحکومت میں قائم صدارتی محل ’معاشیق‘ پر مظاہرین کا حملہ کسی بھی طور پر قانونی دائرے میں پرامن مظاہرہ نہیں تھا۔ یہ دنگا فساد، مملکت اور قانون پر حملہ تھا۔

یاد رہے مظاہرین نے منگل کے روز ’معاشیق‘ محل پر حملہ کیا تھا جہاں الریاض معاہدے کے بعد عدن میں قائم حکومت رہائش پذیر ہے۔ مظاہرین بنیادی ضروریات کی فراہمی میں ناکامی اور تن خواہوں کی عدم ادائی سمیت یمنی لیرا کی قدر میں مسلسل گراوٹ جیسے ایشوز پر احتجاج کر رہے تھے۔