.

سعودی عرب عالمی سطح پر فوجی اور دفاعی تعاون کو وسعت دینے کے لیے کوشاں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں چیف آف جنرل اسٹاف لیفٹیننٹ جنرل فیاض الرویلی دوست ملک جمہوریہ یونان کے دورے کے دوران اپنے یونانی ہم منصب لیفٹیننٹ جنرل کانسٹینٹنس فلوروس سے ملاقات کی۔ ملاقات کے دوران انہوں نے دفاعی تعاون کو فروغ دینے اور باہمی دلچسپی کے امورپر تبادلہ خیال کیا۔ دونوں دوست ممالک کے مابین کاروباری تعلقات خصوصا دفاعی اور عسکری امور میں شعبوں میں تعاون کو فروغ دینے پر اتفاق کیا۔ سعودی عرب اور یونان کی عسکری قیادت نے دفاعی اور فوجی شعبے میں ایک دوسرے کے تجربات سے استفادہ کرنے کے عزم کا اعادہ کیا۔

جنرل فیاض الرویلی نے 'سودا ایئر بیس' “پر یونان اور سعودی عرب کی ہونے والی مشترکہ مشقوں کا بھی جائزہ لیا۔ ان مشقوں کو 'آئی فالکن 1'کے نام سے شروع کیا گیا تھا۔ان مشقوں میں یونان کے "ایف -16" "میراج -2000" اور "فینٹم پی -4" فورس طیارے اپنے کرتب دکھا رہے ہیں۔ ان مشقوں کا مقصد متعدد تربیتی سرگرمیوں‌کا نفاذ، جارحانہ اور دفاعی نوعیت آپریشنز کی تربیت بھی ان مشقوں کا حصہ ہے۔

اس موقعے پر سعودی عرب کے آرمی چیف نے اپنے یونانی ہم منصب سے ملاقات میں کہا کہ خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز، ولی عہد شہزادہ محمد بن عبدالعزیز اور نائب وزیر دفاع شہزادہ خالد بن سلمان بن عبدالعزیز عالمی سطح پر دفاعی اور فوجی تعلقات اور تعاون کو وسعت دینے کے خواہاں ہیں۔