.

جازان : پٹرولیم مصنوعات کے ٹرمینل پر حوثی ملیشیا کا راکٹ حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی وزارت توانائی میں ذمے دار ذرائع نے بتایا ہے کہ جمعرات کی شب 9:08 پر جازان میں پٹرولیم مصنوعات کے ایک ڈسٹری بیوشن ٹرمینل کو حوثی ملیشیا کی جانب سے تخریب کاری کا نشانہ بنایا گیا۔ حملے کے نتیجے میں ٹرمینل کے ایک ٹینک میں آگ بھڑک اٹھی۔ تاہم کسی قسم کا جانی نقصان نہیں ہوا۔

ذرائع نے اپنے بیان میں بتایا کہ سعودی عرب اس بزدلانہ تخریبی کارروائی کی مذمت کرتا ہے۔ اہم تنصیبات پر یہ حملہ مملکت کے خلاف نہیں بلکہ اس کے ذریعے پٹرولیم برآمدات کی سیکورٹی کو نشانہ بنایا جا رہا ہے اور توانائی کی عالمی ترسیل کے استحکام اور عالمی تجارت کی آزادی کو متزلزل کیا جا رہا ہے۔ یہ مجموعی صورت میں عالمی معیشت پر حملہ ہے۔

اس سے قبل یمن میں آئینی حکومت کو سپورٹ کرنے والے عرب اتحاد نے ایک اعلان میں بتایا تھا کہ سعودی فضائی دفاعی نظام نے دھماکا خیز مواد سے بھرے 8 ڈرون طیاروں کو تباہ کر دیا۔ یہ ڈرون طیارے حوثی ملیشیا نے سعودی عرب میں شہریوں کو نشانہ بنانے کے واسطے بھیجے تھے۔

مزید یہ کہ حوثی ملیشیا نے جازان اور نجران یونیورسٹیوں کو نشناہ بنانے کی بھی کوشش کی۔

عرب اتحاد نے سعودی دفاعی نظام کے ہاتھوں تباہ ہونے والے حوثیوں کے ڈرون طیاروں کی تصاویر بھی جاری کیں۔