.

سعودی عرب: منی لانڈرنگ مافیا کے عناصر کو 51 سال قید 17 کروڑ60 لاکھ ریال ضبط

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے پبلک پراسیکیوٹر نے مقامی اور غیر ملکی عناصر پر مشتمل 11 رکنی منی لانڈرنگ گروپ کے خلاف فیصلہ سناتے ہوئے انہیں مجموعی طور پر 51 سال قید کی سزا سنائی ہے اور ان کے قبضے سے 17 کروڑ 60 لاکھ ریال کی رقم قبضے میں‌ لی گئی ہے۔

پراسیکیوٹر جنرل کے مطابق منی لانڈرنگ مافیا میں دوسرے عرب ملکوں کے افراد کے ساتھ مقامی ملزمان بھی ملوث ہیں جنہوں نے بنکوں کے ساتھ جعلی کھاتوں کے ذریعے غیر قانونی طریقے سے خطیر رقم بیرون ملک بھیجنے کی کوشش کی۔ تحقیقات کے دوران پتا چلا کہ ملزمان نے جن لوگوں کے بنک کھاتے استعمال کیے ہیں انہیں اصل رقم کا 5 فی صد کمیشن دینے کی پیش کش کی گئی تھی۔ ملزمان نے دو بار ان کھاتوں سے بیرون ملک رقم منتقل کی۔

عدالت نے ملزمان کے خلاف مقدمات کی سماعت اور مکمل ثبوت کی فراہمی کے بعد منی لانڈرنگ میں ملوث ملزمان کو 51 سال قید اور 176 ملین ریال کی رقم ضبط کرنے کی سزا سنائی ہے۔ ملزمان کے قبضے سے 7 لاکھ ریال نقد قبضے میں لیے گئے ہیں جب کہ ان کے بنک کھاتوں سے 7 ملین ریال کی رقم ضبط کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔ ملزمان کو 16 کروڑ 60 لاکھ ریال جرمانہ، ان کے کاروباری پرمٹ منسوخ، 4 کاروباری فرمیں بند کرنے کے ساتھ سزا پوری کرنے کے بعد انہیں ملک بدر کرنے کے احکامات دیے گئے ہیں۔