.

سعودی ولی عہد کی یمن کے صدر کے ساتھ ٹیلی فون پر بات چیت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز نے کل منگل کے روز یمن کے صدر عبد ربہ منصور ہادی سے ٹیلی فون پر بات چیت کی۔

بات چیت میں یمن کی تازہ ترین صورت حال اور یمن میں بحران کے خاتمے کے لیے ایک جامع سیاسی حل تک پہنچنے کے لیے سعودی منصوبے کی بین الاقوامی تائید زیر بحث آئی۔ یمنی صدر نے بھی مذکورہ منصوبے کے لیے اپنی حکومت کی جانب سے حمایت کا اعادہ کیا۔ انہوں نے یمن میں مستقل امن اور استحکام کو یقینی بنانے کے لیے سعودی عرب کی شدید خواہش کو سراہا۔

سعودی ولی عہد نے یمنی صدر کو باور کرایا کہ ان کا ملک یمنی عوام کے مصائب کم کرنے کے لیے یمن میں آئینی حکومت کی ہر ممکن مدد جاری رکھے گا۔ شہزادہ محمد نے یمن کی تعمیر نو اور بحالی کے پروگرام کے تحت 42.2 کروڑ ڈالر مالیت کے تیل کی مصنوعات فراہم کرنے کا اعلان کیا۔

دونوں شخصیات نے "گرن مڈل ایسٹ" پروگرام کا جائزہ لیا۔ اس کا مقصد خطے کے ممالک کے ساتھ شراکت داری کے ذریعے ماحولیاتی چیلنجوں کا مقابلہ کرنا ہے۔ یمنی صدر نے اس منصوبے کا خیر مقدم کرتے ہوئے یقین دہانی کرائی کہ یمن اس سلسلے میں سعودی عرب کی کوششوں کی ہر ممکن معاونت کرے گا۔