.

کنگ عبدالعزیز لائبریری کے ساتھ ہمارے تاریخی تعلقات ہیں : فرانسیسی سفیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ریاض میں متعین فرانس کے سفیر لودووک بوئے نے عرب اور اسلامی ثقافت کے مناظر اور ان میں برقرار تاریخی ورثے کی اقدار سے متعارف ہونے پر مسرت کا اظہار کیا ہے۔

فرانسسی سفیر کا یہ موقف منگل کی دوپہر ایک وفد کے ہمراہ ریاض میں واقع شاہ عبدالعزیز پبلک لائبریری کے دورے کے دوران سامنے آیا۔ وفد میں فرانسیسی سفیر کی ثقافتی مشیر اور فرانس کے ثقافتی اتاشی بھی شامل تھے۔ فرانسیسی وفد کا استقبال لائبریری کے نائب نگران اعلی ڈاکٹر عبدالکریم الزید اور لائبریری کے ڈائریکٹر جنرل بندر المبارک نے کیا۔

فرانسیسی وفد نے لائبریری کے مختلف شعبوں اور منصوبوں کا دورہ کیا۔

وفد نے لائبریری کی جانب سے منعقد کی جانے والی عربی رسم الخط کی نمائش کا بھی دورہ کیا۔ نمائش میں مختلف زمانوں میں عربی رسم الخط کے جمالیاتی پہلوؤں کو اجاگر کرنے والے فن پاروں اور اشیاء کی بڑی تعداد کے علاوہ قدیم اور تاریخی نادر مخطوطات بھی رکھے گئے ہیں۔

اس موقع پر فرانسیسی سفیر لودووک بوئی نے کہا کہ "مجھے بہت خوشی ہے کہ میں آج ریاض میں کنگ عبدالعزیز پبلک لائبریری میں موجود ہوں۔ یہ بین الاقوامی سطح پر مشہور اس لائبریری کا میرا پہلا دورہ ہے۔ ترجمے اور تعاون کے شعبے میں فرانس اس لائبریری کے ساتھ تاریخی تعلقات رکھتا ہے۔ آج میں نے اس بڑی لائبریری کو دیکھ جہاں لاکھوں کتابیں موجود ہیں۔ یہاں خاص طور پر ثقافت کے میدان میں نہایت اہم سرگرمیاں انجام دی جاتی ہیں۔ میں مملکت میں فرانسیسی کمیونٹی کے ساتھ ایک بار پھر یہاں کا دورہ کروں گا"۔

دورے کے اختتام پر معزز سفیر کو فرانسیسی کتب کا ایک مجموعہ بطور تحفہ دیا گیا۔ سعودی عرب اور عرب شخصیات سے متعلق یہ کتابیں کنگ عبدالعزیز لائبریری کی جانب سے شائع کی گئیں۔