.

"شریک" پروگرام سعودیوں کے لیے روزگار کے ہزاروں مواقع جنم دے گا : اقتصادی ماہر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی ولی عہد اور اقتصادی و ترقیاتی امور کی کونسل کے سربراہ شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز نے آج بدھ کے روز نجی سیکٹر کے ساتھ شراکت داری مضبوط بنانے کا پروگرام متعارف کرا دیا۔ یہ پروگرام مملکت میں مقامی کمپنیوں کے لیے مخصوص ہے۔ اس کا مقصد سرکاری اور نجی سیکٹروں کے درمیان شراکت کو مضبوط بنانا اور تزویراتی اہداف کی تکمیل میں تیزی لانا ہے۔

اس سلسلے میں اقتصادی تجزیہ کار اور لکھاری عبدالرحمن الجبیری نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ "اس پروگرام سے سرمایہ کارانہ شراکت داری کے مزید مواقع پیدا ہوں گے اور مجموعی مقامی پیداوار میں نجی سیکٹر کا حصہ 65٪ تک ہو جائے گا۔ اس کے نتیجے میں سال 2030ء تک مجموعی طور پر 12 ہزار ارب ریال کی سرمایہ کاری کی جائے گی۔

الجبیری کے مطابق مملکت میں نجی سیکٹر پر بھرپور اعتماد ہے اور تمام سیکٹروں کے درمیان کوششوں کو کامیاب بنا کر ہم ایک تاب ناک ادارتی عمل تک پہنچ جائیں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ "شریک" پروگرام سعودی عرب کی اقتصادی تاریخ میں ایک اہم مرحلے کے بیچ سامنے آیا ہے۔ یہ بڑے پیمانے پر سرمایہ کاری کے تناسب میں 50٪ کا اضافہ کرے گا اور دونوں سیکٹروں کے درمیان مالیاتی اور نقدی تعاون اور اثاثوں کی سرمایہ کاری کو مضبوط بنائے گا۔

شریک کے نام سے متعارف کرایا جانے والا نیا منصوبہ ،،، مملکت کے ویژن 2030ء کے اقتصادی اہداف کو یقینی بنانے اور روزگار کے لاکھوں نئے مواقع فراہم کرنے میں مدد گار ثابت ہو گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں