.

رمضان المبارک میں مسجد حرام میں نمازیوں اور معتمرین کے لیے10 اسپتال 82 مراکز صحت مخت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی وزارت صحت نے 'کوویڈ 19' وبا کے مضراثرات سے بچاؤ کےلیے رمضان المبارک کے موقعے پر خصوصی انتظامات کیے ہیں تااکہ حرم مکی میں عبادت اور عمرہ کی سعادت حاصل کرنے لیے آنے والے مسلمانوں کوتحفظ فراہم کیا جاسکے۔

وزارت صحت نے رمضان المبارک کے دوران زائرین کو ہرممکن طبی سہولیات کی فراہمی کے لیے تربیت یافتہ عملہ مقرر کیا ہے اور تمام اسپتالوں اور مراکز صحت میں صحت کی تمام بنیادی سہولیات فراہم کی ہیں۔

وزارت صحت نے حرم مکی میں انتہائی نگہداشت وارڈزکی تعداد تین گنا بڑھا دی ہے تاکہ خدا نخواستہ وبا پھیلنے کی صورت میں زائرین، نمازیوں اور معتمرین کو تحفظ فراہم کیا جا سکے۔

حرم مکی میں طبی عملہ چوبیس گھنٹوں کی بنیاد پر زائرین بیت اللہ کی خدمت کے لیے متحرک ہے۔ چوبیس گھنٹوں میں چھ چھ گھنٹے کے لیے چارالگ الگ ٹیموں کو مختص کیا گیا ہے۔

ماہ صیام کے دوران بھی حرم مکی کے اسپتالوں میں کرونا ویکسین لگائے جانے کا عمل جاری رہے گا۔ ویکسین لگانے کے لیے اس حوالے سے مختص کردہ ایپلی کیشنز سے رجسٹریشن کرانا ہوگی۔ بزرگ شہریوں اور طبی عملے کو ترجیحی بنیادوں پر ویکسین فراہم کی جا رہی ہے۔