.

وڈیو: سعودی طالب علم نے جان پر کھیل کر آسٹریلین بوڑھے شخص کو بچا لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

آسٹریلیا کے شہر ایڈیلیڈ میں میں سعودی طالب علم نوح الحربی نے ایک 94 سالہ آسٹریلوی شہری کو آگ کی لپیٹ میں آنے سے بچا لیا۔ الحربی کی اس دلیری کو سوشل میڈیا پر لوگوں کی جانب سے بڑی پذیرائی حاصل ہو رہی ہے۔

نوح الحربی نے "العربیہ ڈاٹ نیٹ" کو بتایا کہ "گذشتہ ہفتے کے روز دوپہر ایک بجے میں یونیورسٹی سے واپس آ رہا تھا۔ اس دوران میں ایک عمر رسیدہ خاتون ہیجانی کیفیت میں چلا کر ایک شخص کے لیے مدد مانگ رہی تھی ، یہ آگ کی لپیٹ میں آئے ہوئے ایک گھر میں پھنسا ہوا تھا جہاں سے دھوئیں کے گہرے بادل اٹھ رہے تھے۔ اس گھر میں بجلی کے شارٹ سرکٹ کے سبب دھماکوں کی آوازیں بھی سنائی دے رہی تھیں۔ اس ہنگامی صورت حال کے سبب میں نے اپنی جان کی پروا کیے بغیر فوری طور پر ان لوگوں کی مدد کا فیصلہ کر لیا"۔

سعودی طالب علم نے مزید بتایا کہ "میں نے گھر کے مرکزی دروازے سے اندر داخل ہونے کی کوشش کی مگر آگ کی گرمی کے سبب کامیاب نہیں ہو سکا۔ میں نے گھر کی کھڑکی توڑ کر اندر داخل ہونے کا فیصلہ کیا۔ اس کے نتیجے میں مجھے گہرا زخمی بھی آیا مگر اس وقت مجھے اس کا احساس نہیں ہوا۔ آخر کار حتمی طور پر میں نے گھر کے پچھلے دروازے کو ایک آسٹریلوی ساتھی کی مدد سے توڑا اور وہاں سے اندر داخل ہو گیا۔ اندر پہنچ کر میں نے ایک عمر رسیدہ بوڑھے شخص کو زمین پر لیٹے ہوئے پایا۔ بعد ازاں میں اس شخص کو گھر کی کھڑکی کے ذریعے باہر لانے میں کامیاب ہو گیا۔ اس دوران میں شہری دفاع کی ٹیم مجھے برابر ہدایات دیتی رہی جو گھر میں آگ لگنے کے بعد کچھ تاخیر سے جائے وقوع پر پہنچی تھی"۔