.

آئندہ سال "عرب ٹرانسلیشن آبزرویٹری" کا منصوبہ شروع ہو گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں 'لٹریچر، پبلشنگ اینڈ ٹرانسلیشن کمیشن' آئندہ سال 2022ء کے اوائل میں "عرب ٹرانسلیشن آبزرویٹری" کا منصوبہ متعارف کرانے کا ارادہ رکھتا ہے۔ اس کا مقصد ترجمے کے میدان میں عرب دنیا کی کوششوں میں نظم و نسق پیدا کرنا اور اس عمل کو سپورٹ فراہم کرنا ہے۔ یہ آبزرویٹری عرب دنیا میں ترجمے کے عمل کو محفوظ کرے گی اور معرفت و ثقافت کے تبادلے کے سلسلے میں ایک با اعتماد ذریعہ ہو گی۔

سعودی سرکاری خبر رساں ایجنسی (ایس پی اے) کے مطابق عرب ٹرانسلیشن آبزرویٹری ترجمے کے سیکٹر میں مسابقت کے ایک پائیدار نظام کو ترقی دے گی۔ اس طرح مملکت کو اقتصادی طور پر بھی فائدہ پہنچے گا۔ ساتھ ہی عرب دنیا میں تحقیق سے منسلک اور وابستہ افراد اور اداروں کے واسطے ایک جامع ماحول بھی تخلیق پائے گا۔

عرب ٹرانسلیشن آبزرویٹری دراصل 'لٹریچر، پبلشنگ اینڈ ٹرانسلیشن کمیشن' کی ان کوششوں کا حصہ ہے جن کا مقصد ایک ایسا تخلیقی ادبی ماحول فراہم کرنا ہے جس میں مؤلفین، مترجمین اور ناشرین کی کوششیں مربوط ہوں۔ اس ماحول میں عربی سے اور عربی میں ترجمے کی سرگرمیاں بھرپور طور سے انجام دی جا رہی ہوں۔

مقبول خبریں اہم خبریں