.

سعودی عرب: توہین آمیز رویے کا سامنا کرنے والی سبزی فروش کے حق میں سعودی گورنرکا فیصلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں مشرقی صوبے کے نائب گورنر شہزادہ احمد بن فہد بن سلمان نے ہدایت کی ہے کہ دمام میں سبزی فروش خاتون زیاد کو مستقل اور باقاعدہ طور پر ایک دکان فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ اسے رہائش فراہم کی جائے۔ ام زیاد کے حوالے سے سعودی گورنر نے یہ بیان ایک ایسے وقت میں دیا ہے جب سوشل میڈیا پر خاتون کا مذاق اڑایا گیا اور اسے بدنام کرنے کی مذموم کوشش کی گئی ہے۔

ڈپٹی گورنر شہزادہ احمد بن فہد نے ہدایت کی ہے کہ ام زیاد کو دمام کی سبزی منڈی میں مستقل دکان دی جائے اور اس کے لیے معقول رہائش کا بندو بست کیا جائے۔
ام زیاد نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو بتایا کہ ڈپٹی گورنر نے اس کے ساتھ ہونے والے شرمناک برتائو کا نوٹس لیتے ہوئے اس کے خاندان سے رابطہ کیا ہے۔ خاتون نے شہزادہ احمد بن فہد کی طرف سے رہائش اور دکان فراہم کرنے پر ان کا شکریہ ادا کیا۔

خیال رہے کہ حال ہی میں ٹویٹر پر پوسٹ کی گئی ایک ویڈیو میں ایک خاتون سبزی فروش کو دکھایا گیا تھا۔ سوشل میڈیا پر خاتون کو بدنام کرنے کی مذموم کوشش کی گئی جس پر شہریوں‌نے ام زیاد کے خلاف مکروہ طرز عمل اپنانے کی فوری تحقیقات کا مطالبہ کیا تھا۔ پبلک پراسیکیوشن نے خاتون سبزی فروش کی ویڈیو بنانے والے شخص کو طلب کرکے اس سے پوچھ تاچھ کی ہے اور اس کے خلاف قانونی کارروائی شروع کردی گئی ہے۔