.

بیرون ملک سے آنے والے غیر سعودیوں کی انشورنس پالیسی اپڈیٹ کرنے کا فیصلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے مرکزی بنک نے بیرون ملک سے آنے والے غیر سعودی باشندوں کی انشورنس پالیسیاں اپ ڈیٹ کرنے کا اعلان کیا ہے تاکہ کرونا وائرس سے ہونے والے خطرات پر قابو پایا جا سکے۔

مرکزی بینک نے ٹویٹر پر پوسٹ کردہ ایک بیان میں کہا ہے کہ غیرملکی باشندوں کی انشورنس دستاویزات اپ ڈیٹ کرنے کا مقصد عمرہ کی سعادت حاصل کرنے یا سیاحت کی غرض سے آنے والے غیرملکیوں کو طبی تحفظ فراہم کرنا اور 'کرونا' وبا کی وجہ سے درپیش خطرات کا تدارک کرنا اور خطرات پرقابو پانا ہے۔

بینک نے مزید کہا کہ اس تازہ کاری کا مقصد یہ ہے کہ سعودی عرب میں بیرون ملک سے سیاحت ،زیارت یا عمرہ کے لیے آنے والے افراد کے لیے کرونا وائرس (کوویڈ - 19) کے انفیکشن کے خدشات سے متعلق کیسوں کی روک تھام اور غیرملکیوں کو مناسب طبی سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنانے میں ان کی مدد کرنا ہے۔

سعودی سنٹرل بینک کا کہنا ہے کہ انشورنس دستاویزات کو اپ ڈیٹ کرنے کے کئی فواید ہیں جن میں انشورنس کوریج کی دستیابی ، متاثرہ کیسز کے علاج کے اخراجات ، متاثرین کو قرنطینہ میں رکھنے اور اس دوران ان کی طبی ضروریات کی دیکھ بحال جیسے فواید شامل ہیں۔