.

سعودی کسٹم اتھارٹی کا خریداری اور تحائف ظاہر کرنے سے متعلق تفصیلات کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں 'زکات، ٹیکس اینڈ کسٹمز اتھارٹی' نے واضح کیا ہے کہ زمینی، فضائی اور سمندری راستوں سے آنے والے مسافروں کے لیے مملکت پہنچنے پر یہ ممکن ہو گا کہ وہ اتھارٹی کی اسمارٹ ڈیوائس ایپلی کیشن کے ذریعے اپنی خریداری اور وصول شدہ تحائف کو ظاہر کر دیں۔ علاوہ ازیں مذکورہ اشیاء کو ظاہر کرنے کا عمل اتھارٹی کی ویب سائٹ پر جا کر بھی مکمل کیا جا سکتا ہے۔ اتھارٹی نے یہ بات العربیہ ڈاٹ نیٹ کو جاری کیے گئے ایک پریس ریلیز میں بتائی۔

اتھارٹی نے مملکت آنے والے مسافروں پر زور دیا ہے کہ وہ 3 ہزار سعودی ریال یا اس کے مساوی غیر ملکی کرنسی سے زیادہ مالیت کی خریداری کی صورت میں اسے ظاہر کریں ،،، اور پھر کسٹم ڈیوٹی اور ٹیکس کی ادائیگی کریں۔ یہ تمام کارروائی خلیج تعاون کونسل کی جانب سے خلیجی ریاستوں کے لیے یکساں کسٹم نظام کے نفاذ کے تحت عمل میں آئے گی۔

اتھارٹی نے سعودی عرب آنے والے یا مملکت سے روانہ ہونے والے مسافروں کو تاکید کی ہے کہ جو لوگ 60 ہزار سعودی ریال یا اس کے مساوی غیر ملکی کرنسی سے زیادہ مالیت کی کرنسی، زیورات یا قیمتی اشیاء کے حامل ہوں گے انہیں "ڈیکلریشن" پیش کرنا ہو گا۔ ان اشیاء میں سعودی عرب میں ممنوعہ یا محدود کی گئی چیزیں بھی شامل ہیں مثلا سگریٹ یا تمباکو وغیرہ۔

اتھارٹی کے مطابق ڈیکلریشن پیش نہ کرنے یا غلط معلومات ظاہر کرنے کی صورت میں ضبط شدہ کرنسی یا اشیاء کی 25% مالیت کے برابر مالی جرمانہ عائد کیا جائے گا۔ خلاف ورزی دہرانے کی صورت میں یہ جرمانہ 50% ہو جائے گا۔