.

مسجد اقصیٰ اور بیت لحم میں اسرائیلی فوج کے ساتھ جھڑپوں میں درجنوں فلسطینی زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مقبوضہ بیت المقدس بالخصوص مسجد اقصیٰ کے اطراف اور غرب اردن کے جنوبی شہر بیت لحم میں آج جمعہ کے روز قابض اسرائیلی فوج اور فلسطینی شہریوں کے درمیان ہونے والی خونی جھڑپوں میں دسیوں فلسطینی زخمی ہوگئے ہیں۔

فلسطینی ذرائع ابلاغ کے مطابق بیت المقدس میں مسجد اقصیٰ کےاطراف میں اسرائیلی فوجیوں نے فلسطینی شہریوں پر دھاتی گولیوں سے حملہ کیا جس کے نتیجے میں متعدد فلسطینی زخمی ہوگئے۔

قابض فوج نے مسجد اقصیٰ کے نمازیوں پر صوتی بموں اور ربڑ کے خول میں لپٹی دھاتی گولیوں کا استعمال کیا۔

ہلال احمر فلسطین کے مطابق بیت لحم اور کفر قدوم میں اسرائیلی فوجیوں اور فلسطینیوں میں ہونے والی جھڑپوں میں 38 فلسطینی زخمی ہوئے جنہیں فوری طبی امداد فراہم کی گئی۔

خیال رہے کہ فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی پر اسرائیلی فوج کی وحشیانہ بمباری اور بیت المقدس میں الشیخ جراح کے مقام سے فلسطینیوں کی جبری بےدخلی کی سازش کے خلاف فلسطینی مسلسل سراپا احتجاج ہیں۔

فلسطینی شہروں میں اسرائیلی فوج کی وحشیانہ کارروائیوں کے خلاف ہونے والے مظاہروں کے دوران مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے اسرائیلی فوج اور پولیس طاقت کا اندھا دھند استعمال کرتی ہے۔

غزہ کی پٹی میں سنہ 2014ٰء کی جنگ کے بعد رواں مئی میں 11 روز تک جاری رہنے والی اسرائیلی فوج کی وحشیانہ کارروائیوں میں اڑھائی سو فلسطینی شہید اور دو ہزار کے قریب زخمی ہوچکے ہیں۔