.

جزیرہ ’شُریرہ‘ کو پل کے ذریعے ملانے کےلیے ریڈ سی اور ارکیروڈن میں معاہدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی ریڈ سی ڈویلپمنٹ کمپنی نے عالمی سطح کے جدید سیاحتی منصوبے کا انکشاف کرتے ہوئے بتایا ہے کہ کمپنی نے جزیرہ شریرہ تک پل کے ذریعے سیاحوں کی رسائی یقینی بنانے کے لیے ’ارکیروڈن‘ کمپنی کے ساتھ ایک پل کی تعمیر کا معاہدہ کیا ہے۔

ریڈ سی ڈویلپمنٹ کمپنی کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ 33 کلو میٹر پر پھیلا جزیرہ شریرہ سیاحوں کی جنت بن سکتا ہے۔ اس تک رسائی کے لیے 12 کلو میٹر طویل پل سمندر کے اوپر تیار کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور یہ کام ریڈ سی اور ’آرکیروڈن‘ دونوں مل کر مکمل کریں گی۔

خیال رہے کہ ’ارکیروڈن‘ دنیا بھر میں سمندر میں بنیادی ڈھانچے کی تعمیر کی ایک بڑی کمپنی ہے کو بین الاقوامی سطح کے منصوبوں پر کام کررہی ہے۔ کمپنی کے ساتھ کیے گئے معاہدے کے تحت ارکیروڈن انجینیرنگ، سامان کی فراہمی اور جزیرہ شریرہ کے پل کی تعمیر میں بنیادی کردار ادا کرےگی۔

پل کے تین حصے ہیں۔ پہلے حصے کی لمبائی 36 میٹر ہوگی۔ اس کے بعد پل کا مرکزی حصہ ہے۔

ریڈ سی ڈویلپمنٹ کمپنی کے چیف ایگزیکٹو جان باگانو نے ایک بیان میں کہا کہ پل کی تعمیر کے بعد جزیرہ شریرہ تک سیاحوں کی براہ راست رسائی ممکن ہوجائے گی جس کے بعد ہم اگلےمرحلے کے مرکزی ہدف یعنی جزیرے کو سیاحتی مقاصد کے لیے تیار کرنے کےاور قریب ہوجائیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ پل ہمارے لیے انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔ یہ پل نہ صرف جزیرہ شریرہ تک رسائی فراہم کرے گا بلکہ اطراف کے دیگر جزیروں تک فاصل کم کردے گا۔