.

سعودی عرب کی طرف چھوڑا گیا حوثیوں کا بمبار ڈرون تباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں آئینی حکومت کے دفاع کے لیے سرگرم عرب اتحاد نے دعویٰ کیا ہے کہ سعودی فضائی دفاع نے جمعرات کے روز یمن کے حوثی باغیوں کی طرف سے مملکت کے علاقے خمیس مشیط کی طرف چھوڑا گیا ایک بمبار ڈرون تباہ کردیا۔

عرب اتحاد کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ اتحاد دشمن کی طرف سے شہری تنصیبات اور شہریوں پر حملوں کی سازشوں کو ناکام بنانے کے ساتھ فوجی کارروائیوں میں شہریوں کے جان ومال کے تحفظ کو یقینی بنانے کی ہرممکن کوشش کرتا ہے۔ دوسری طرف حوثی دہشت گرد بین الاقوامی قوانین اور انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں کا ارتکاب کرتے ہوئے تباہ کن ہتھیاروں سے شہری آبادی پرحملے کررہےہیں۔

عرب اتحاد کے ترجمان نے ’العربیہ‘ چینل کو بتایا کہ چند روز قبل حوثی ملیشیا نے جعلی فتوحات کے دعوے کیے تھے۔ بریگیڈیئر ترکی المالکی نے بتایا کہ حوثی ملیشیا کی طرف سے جاری پروپیگنڈے کا مقصد اپنے جنگجو عناصر کی حوصلہ افزائی کرنا اور ان کے حوصلوں کو پست ہونے سے بچانا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ حقیقت یہ ہے کہ مآرب اور الجوف گورنریوں میں حوثی ملیشیا کو بھاری جانی اور مالی نقصان اٹھانا پڑا اور ان کی چار سو فوجی گاڑیاں تباہ کی گئی ہیں۔