.

نیوم اور سعودی براڈ کاسٹنگ کارپوریشن کے اشتراک سےڈیجیٹل میڈیا اکیڈمی کے قیام کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی ’نیوم‘ کمپنی اور سعودی ریڈیو اور ٹیلی ویژن کارپوریشن کی شراکت سےڈیجیٹل میڈیا ٹریننگ اکیڈمی کے قیام کا اعلان کیا گیا ہے۔ اس اقدام کا مقصد جدید ٹیکنالوجی اور ذرائع ابلاغ کے میدان میں مستقبل میں بہترین بین الاقوامی معیار کے لیے انکیوبیٹرمیڈیا ماحول فراہم کرنا ہے۔ اس اکیڈمی کے قیام سے ذرائع ابلاغ کے میدان میں بہترین اور پیشہ ور افراد کار کی تیاری، ڈیجیٹل پلیٹ فارمز پر مقامی ’کنٹنٹ‘ کی تقسیم کے علاوہ ، مختصر ویڈیو مواد تیار کرنے، تصاویر اور ویڈیوز کی مدد سے فیچرفلموں کی پروڈکشن، میڈیا کے میدان میں سامنے آنے والی تیز رفتار اپڈیٹس کی کے مطابق ابلاغی مواد کی تیاری کی راہ ہموار ہوگی۔ یہ اکیڈمی صحافیہ ندا الشیبانی کی نگرانی میں قائم کی جا رہی ہے۔

یہ اکیڈمی اپنے ابتدائی مرحلے میں سعودی عرب کے مختلف حصوں سے 30 نوجوان مردوں اور خواتین کے لیے ایک تربیتی پروگرامات منعقد کرے گی تاکہ ان کی صلاحیتوں کو بہتر بنایا جاس سکے، فلم بنانے اور مختصر ویڈیو مواد تیار کرنے کے میدان میں ان کی مہارت کو مزید بہتر بنانا ہے۔

بامقصد ڈیجیٹل میڈیا مواد کی تیاری اور انتظام کے میدان میں سائنسی تصورات اور عملی استعمال کے بارے میں معلومات فراہم کرنا، ریڈیو اور ٹیلی ویژن کارپوریشن کے ساتھ تعلیمی شراکت سے ان تجربات کو اپنانے اور میڈیا کے میدان میں روزگار کے مواقع پیدا کرنے کے امکانات اس تربیتی پروگرام کے اہم مقاصد ہیں۔

نیوم کمپنی کے میڈیا وژن میں نوجوانوں صلاحیتوں کی نشوونما اورانہیں ہنر مند بنانے اور ان کی مہارتوں میں اضافہ اہم عنصر ہے۔ نیوم کا مقصد اسے ایک علاقائی مرکز اور دنیا کے سب سے بڑی میڈیا انڈسٹری کے سب سے بڑے مراکزکے طور پر پیش کرنا اس کے اہداف کا حصہ ہے۔

ریڈیو اور ٹیلی ویژن اتھارٹی کے سی ای او محمد الحارثی نے ایک بیان کہا کہ ان ترقیاتی اقدامات میں اتھارٹی کی شراکت نوجوان کی قابلیتوں کی تیاری میں کردار ادا کرنے میں اپنی ذمہ داریوں کی انجام دینا ہے۔ تاکہ میڈیا کے میدان میں وژن 2030 کے اہداف اور مقاصد کا حصول ممکن بنایا جاسکے۔