.

سعودی عرب کی مشکوک غیرملکی تنظیموں کو مالی عطیات دینے پردوبارہ وارننگ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی اسٹیٹ سیکیورٹی نے نامعلوم بیرونی گروپوں کو عطیات بھیجنے سے متعلق انتباہ کی تجدید کرتے ہوئے "ٹویٹر" ویب سائٹ پر اپنے آفیشل اکاؤنٹ کے ذریعے زور دیا ہے کہ نامعلوم غیرملکی تنظیموں کو جو عطیات بھیجنے کے بجائے مملکت کے بیرون ملک فلاحی مشن میں حصہ ڈالا جائے۔

اس سے قبل اسٹیٹ سیکیورٹی کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ شہری بیرون ملک کسی بھی ایسے ادارے، فرد یا تنظیم کوعطیات نہیں دے سکتے جو مشکوک سرگرمیوں میں ملوث پائے گئے ہوں۔ حکومت نے شہریوں پر زور دیا تھا کہ وہ سرکاری سطح پر منظور شدہ شاہ سلمان سنٹر برائے ریلیف کے ذریعے اندرون اور بیرون ملک فلاحی پروگراموں کے لیے عطیات دیں اور غیر مجاز اور مشکوک اداروں کو فنڈز کی فراہمی سے اجتناب کریں۔