.

باحہ : معدومیت کے خطرے سے دوچار 20 "کیپرا" پہاڑی بکرے آزاد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں فطری حیات کی ترقی کے قومی مرکز نے کل ہفتے کی صبح مملکت کے جنوب مغرب میں واقع ضلع بلجرشی کے قومی پارک میں 20 (Capra) پہاڑی بکروں کو آزاد چھوڑ دیا۔ ان بکروں کی نسل کو منعدم ہونے کے خطرے کا سامنا ہے۔ باحہ صوبے میں یہ اپنی نوعیت کا پہلا اقدام ہے۔

باحہ صوبے کے گورنر ڈاکٹر حسام بن سعود بن عبدالعزیز نے فطری حیات کے تحفظ کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے علاقے میں فطری حیوانات کے دوبارہ چھوڑے جانے کے عمل پر مسرت کا اظہار کیا۔ گورنر کے مطابق ماحولیاتی توازن کو یقینی بنانے کے لیے اس عمل کی بڑی اہمیت ہے۔ انہوں نے اس حوالے سے ماحولیات، پانی اور زراعت کی وزارت کی کوششوں کو قابل تحسین قرار دیا۔

واضح رہے کہ بلجرشی ضلع میں مذکورہ قومی پارک سعودی وزارت برائے ماحولیات، پانی اور زراعت کے زیر انتظام سب سے بڑے پارکوں میں شمار ہوتا ہے۔ اس کو اپنے پہاڑی ماحول کے سبب امتیازی حیثیت حاصل ہے۔

واضح رہے کہ کیپرا ایک پہاڑی بکرا ہے۔ یہ اپنے دو سینگوں کے سبب امتیازی حیثیت رکھتا ہے۔ یہ سینگ پیچھے کی جانب مڑے ہوتے ہیں اور ان کی لمبائی تقریبا 45 سینٹی میٹر ہوتی ہے۔ اس کی ٹھوڑی کے نیچے بالوں کا گچھا ہوتا ہے جو داڑھی سے ملتا جلتا ہے۔ اس کے نر جانور کی کمر کے وسط میں بال ہوتے ہیں۔ اس کے بالوں کا رنگ کتھئی ہوتا ہے۔

یہ بکرا مدین اور حجاز کے پہاڑی سلسلے اور السروات کے پہاڑوں میں پایا جاتا ہے۔ علاوہ ازیں طویق، اجا اور سلمی کے پہاڑی سلسلے کے پھیلاؤ میں بھی ہوتا ہے۔

یہ پہاڑی بکرا بلند و بالا پہاڑی علاقوں میں طویل فاصلے طے کرتا ہے۔ دھوپ کی تمازت س بچنے کے لیے یہ عموما صبح سویرے اور شام کے وقت سرگرم ہوتا ہے۔